سہ فریقی ٹی ٹوئنٹی فائنل: پاکستان نے آسٹریلیا کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا

  • آسٹریلیا نے اپنی اننگز میں8 وکٹوں کے نقصان پر 183 رنز بنائے ،اوپنر ڈارسی شارٹ نے سب سے نمایاں بیٹنگ کی اور 76 رنز بنائے
  • پاکستان نے 183 رنز کا ہدف 4 وکٹوں کے نقصان پر 19.2 اوورز میں حاصل کرلیا ، فخر زمان بہترین کارکردگی پر مین آف دی میچ اور مین آف دی ٹورنامنٹ قرار
ہرارے: سہ فریقی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سیریز جیتنے کے بعد پاکستانی ٹیم کے کھلاڑیوں کا ٹرافی کے ہمراہ گروپ فوٹو

ہرارے: سہ فریقی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سیریز جیتنے کے بعد پاکستانی ٹیم کے کھلاڑیوں کا ٹرافی کے ہمراہ گروپ فوٹو

ہرارے (آن لائن)پاکستان نے سہ فریقی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے فائنل میں سٹریلیا کو چھ وکٹوں سے شکست دیکر کر فتح سمیٹ لی ہے ،اوپننگ بلے باز فخر زمان کو بہترین کارکردگی پر مین آف دی میچ اور مین آف دی ٹورنامنٹ قراردیا گیا ۔ آسٹریلیا نے اپنی اننگز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 183 رنز بنائے جس میں اوپنر ڈارسی شارٹ نے سب سے نمایاں بیٹنگ کی اور 76 رنز بنائے۔ان کے علاوہ کپتان فنچ نے بھی جارحانہ بیٹنگ کی اور 47 رنز بنائے لیکن ان دونوں کی بیٹنگ کے علاوہ دیگر آسٹریلوں بیٹسمین اچھی کھیل نہ پیش کر سکے۔پاکستان کی جانب سے بولنگ کا آغاز اچھا نہ تھا اور نہ ہی فیلڈنگ کا معیار لیکن دسویں اوور کے بعد شاداب خان کی بدولت پاکستان نے کم بیک شروع کیا اور جہاں ایک موقع پر لگ رہا تھا کہ آسٹریلیا 200 رنز بنا پائے گا وہاں پاکستان نے وکٹیں حاصل کرنا شروع کر دیں۔اننگز کی خاص بات آسٹریلوی بلے بازوں کی خوش قسمتی جب پوری اننگز میں متعدد بار گیند بلے کا باہری کنارہ لیتے ہوئے باو¿نڈری کے پار چلی جا رہی تھی۔ اس کے علاوہ پاکستان کی فیلڈنگ بھی کافی نقص رہی۔محمد عامر کے پہلے اوور میں دو چوکے لگنے کے بعد فہیم اشرف نے دوسرے اینڈ سے بولنگ شروع کی اور ان کے اوور کی پہلی ہی گیند پر شعیب ملک نے فنچ کا کیچ ڈراپ کر دیا۔آسٹریلوی کپتان آیرون فنچ نے جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 47 رنز بنائے جب دسویں اوور میں شاداب خان نے ان کو کیچ آو¿ٹ کر دیا۔ پہلی وکٹ کی شراکت میں انھوں نے شارٹ کے ساتھ 96 رنز بنائے۔ بارہویں اوور کی آخری گیند پر میکسویل شاداب خان کی دوسری وکٹ بن گئے جب انھوں نے پانچ رنز پر آصف علی کو کیچ دے دیا۔سولہویں اوور میں محمد عامر نے اپنی پہلی گیند پر سٹوئنس کے ہاتھوں چھکا کھایا لیکن چوتھی گیند پر انھیں 12 رنز پر آو¿ٹ کر دیا۔سترہہویں اوور میں شاہین شاہ آفریدی نے ڈارسی شارٹ کی اننگز 76 رنز پر تمام کر دی۔فہیم اشرف نے 18ویں اوور میں الیکس کیری کو آو¿ٹ کر دیا جن کا شاداب خان نے زبردست کیچ لیا۔ کیری نے دو رنز بنائے۔اننگز کے آخری لمحات میں آسٹریلیا کو مزید نقصان اٹھانا پڑا اور مجموعی طور پر آٹھ وکٹیں گنوا کر انھوں نے پاکستان کو جیت کے لیے 184 رنز کا ہدف دیا۔پاکستان کی جانب سے محمد عامر نے تین اور شاداب خان نے شاندار کیچ کے علاوہ دو وکٹیں حاصل کیں۔آ سٹریلیا کے ہدف کے تعاقب میں قومی ٹیم کی جانب سے اننگز کا آغاز فخرزمان اور صاحبزادہ فرحان نے کیا لیکن آغاز کچھ اچھا نہیں رہا ،صرف 2 کے مجموعے پر پاکستان کی 2 وکٹیں گرگئیں۔اوپننگ کے لیے آنے والے صاحبزادہ فرحان دوسری ہی گیند پر بغیر کوئی رن بنائے آو¿ٹ ہوگئے جس کے بعد ون ڈاو¿ن آ نے والے حسین طلعت بھی صفر پر پویلین واپس لوٹ گئے۔ 2 رنز پر 2 وکٹیں گرنے کے بعد قومی ٹیم مشکلات کا شکار ہوگئی تاہم کپتان سرفراز احمد اور فخرزمان نے زمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا، دونوں کھلاڑیوں کے درمیان 45 رنز کی شراکت قائم ہوئی تاہم سرفراز 28 رنز بناکر رن آ و¿ٹ ہوگئے۔سرفراز کے آو¿ٹ ہونے کے بعد شعیب ملک اور فخر زمان نے جارحانہ کھیل پیش کیا، دونوں کھلاڑی نے 107 رنز کی شراکت قائم کی تاہم فخززمان ایک بار پھر اپنی سنچری مکمل کرنے میں ناکام رہے اور 91 رنز بناکر او¿ٹ ہوگئے۔ شعیب ملک نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور ناقابل شکست 43 رنز بنائے، شعیب ملک اور فخر زمان کی جارحانہ اننگز کے باعث پاکستان نے آسٹر یلیا کا 183 رنز کا ہدف 4 وکٹوں کے نقصان پر 19.2 اوورز میں حاصل کرلیا اور سہ فریقی سیریز بھی اپنے نام کرلی ۔ اوپننگ بیٹسمین فخر زمان کو مین آف دی میچ اور مین آف دی سیریز قرار دیا گی ۔واضح رہے کہ سرفرا زا احمد کی کپتانی میں قومی ٹیم نے نویں لگاتار ٹی ٹوئنٹی سیریز اپنے نا م کی ہے جبکہ پاکستان نے 28سال بعد آسٹریلیا کو کسی فائنل میں شکست دی ہے اس سے قبل 8بارپاکستان فائنل میں آسٹریلیا سے ہار چکا ہے ۔ ا س طرح پاکستان آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی رینکنگ میں بھی پہلے نمبر پر براجمان ہے ۔ اس میچ کے لیے پاکستان نے اوپنر حارث سہیل کی جگہ صاحبزادہ فرحان کو جگہ دی ہے جبکہ آسٹریلیا کی جانب سے ڈارسی شارٹ ٹیم میں واپس آئے ہیں۔گروپ میچوں میں دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے کے خلاف ایک ایک جیت حاصل کی تھی اور میزبان زمبابوے کو دونوں میچوں میں شکست دی تھی۔

Scroll To Top