اِس جنون کا مقابلہ بھی جنون سے ہی ہوگا 13-07-2013

kal-ki-baat
اب تو یہ بات امریکہ اور یورپ کے اخبارات میں بھی لکھی جارہی ہے کہ صدر مرسی کے بیشتر دور میں پٹرول اور گیس سٹیشنز پر گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں نظر آیا کرتی تھیں جس کا مطلب یہ تھاکہ حکومت کے پاس گیس اور پٹرول درآمد کرنے کے لئے زرمبادلہ موجود نہیں تھا۔ جیسے ہی صدر مرسی کی حکومت کا تختہ الٹا گیا ` گیس اورپٹرول سٹیشنز پر لمبی لمبی قطاروں کا سلسلہ ختم ہوگیا۔ لوگوں کو گیس بھی ملنے لگی اورپٹرول بھی دستیاب ہونے لگا۔ اور یہ نمایاں تبدیلی دو دن کے اندر ہی آگئی ۔
گویا صدرمرسی کے خلاف عوام کا غصہ اور اشتعال ابھارنے کی ایک منظم سازش کی گئی تھی اور اس سازش میں اندر کے لوگوں سے زیادہ باہر کے لوگ شامل تھے۔ بڑے پیمانے پر سرمایہ باہر کے لوگ ہی فراہم کیا کرتے ہیں ۔ اب تو سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے سرکاری طورپر بھی اعلان کردیا ہے کہ وہ بالترتیب 5ارب اور 3ارب ڈالر کی ہنگامی امداد مصر کی نئی ” سیکولر “ حکومت کو فراہم کررہے ہیں۔ امریکی حکومت نے بھی اندرون خانہ مصر کی فوجی قیادت کو کئی یقین دہانیاں کرائی ہوں گی۔ امریکہ کو صرف اس بات پر قدرے ناکامی ہوئی ہے کہ وہ محمد البرادی کو مصر کا وزیراعظم نہیں بنوا سکا۔ لیکن مصر میں ایسے لوگوں کی کوئی کمی نہیں جن کے صرف نام مسلمانوں جیسے ہیں ورنہ وہ ہر لحاظ سے اسلام کی ضد ہیں۔
میں یہاں یہ نہیں کہہ رہا کہ اخوان المسلمون دورِ جدید کے تقاضوں کو سامنے رکھ کر اسلام کو اس کی روح کے مطابق معاملات ِ مملکت و معاشرت میںنافذ کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ اگر متذکرہ جماعت کے پاس اس قسم کی صلاحیت موجود ہوتی تو اسلام مخالف قوتوں کو اس قدر جلد ہی متحد ہو کر صدر مرسی کا تختہ الٹنے کا موقع نہ ملتا۔
بہرحال یہ آغاز ہے۔۔۔ اُس جنگ کا `جو صرف مصر میں ہی نہیں ہر اس مسلم ملک میں لڑی جائے گی جہاں کے شہری بڑی غالب اکثریت کے ساتھ اپنے معاشرے اور اپنی ریاست کو مدینہ کے رنگ میں ڈھالنے کا خواب دیکھ رہے ہیں۔اس خواب کی تکمیل کا راستہ روکنا اُن عناصر اور اُن قوتوں کے بس کی بات نہیں جنہیں سیکولر اور لبرل کہلانے کا جنون ہے۔ اس جنون کی آبیاری ڈالروں کی ریل پیل کو کنٹرول کرنے والی قوتوں نے بڑی فیاضی کے ساتھ کی ہے۔ آپ کو وطنِ عزیز میں بھی اس قسم کے ” جنونی “ بڑی کثرت کے ساتھ ملیں گے۔ ان کے منہ سے دو نعرے بڑے تواتر کے ساتھ بلند ہوتے ہوں گے۔ ” لبرلزم زندہ باد“۔۔۔جمہوریت زندہ باد۔

Scroll To Top