افغانستان میں سکھوں پر خودکش حملہ، 19 افراد ہلاک

x

افغانستان میں رہنے والی سکھ برادری پر ہونے والا یہ حملہ گزشتہ کئی دہائیوں کا سب سے بڑا حملہ ہے (فوٹو: اسکرین گریب)

جلال آباد: افغانستان کے شہر جلال آباد میں سکھوں کی آبادی پرخودکش حملے میں 10 سکھ باشندوں سمیت کم از کم 19 افراد ہلاک اور 20 سے زائد زخمی ہوگئے۔

افغان میڈیا کے مطابق جلال آباد میں ہونے والے خودکش حملے میں سکھوں کو نشانہ بنایا گیا، حملہ ہوتے ہی سیکیورٹی اداروں نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لے لیا جب کہ ریسکیو اداروں نے  زخمیوں اور لاشوں کو اسپتال منتقل کیا۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق حملہ گورنر ہاؤس کے نزدیک ہوا ۔

صوبائی گورنر عطا اللہ خوگیانی نے واقعے اور ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ حملہ خودکش تھا، تاہم انہوں نے حملے سے متعلق مزید تفصیلات سے آگاہ نہیں کیا۔

اطلاعات ہیں کہ سکھوں کا ایک گروپ افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات کے لیے جارہا تھا جو اس وقت صوبے کے دورے پر تھے۔

خیال رہے کہ افغانستان میں رہنے والے سکھوں پر ہونے والا یہ حملہ گزشتہ کئی دہائیوں کا سب سے بڑا حملہ ہے۔

Scroll To Top