افغانستان میں دیرپا امن کے خواہاں ہیں: جنرل قمر جاوید باجوہ

  • چیف آف آرمی سٹاف کے ایک روزہ دورہ افغانستان کے دوران افغان صدر اشرف غنی ، چیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ کے علاوہ اتحادی فوج کے سربراہ جان نکلسن سے بھی اہم ملاقاتیں
  • پاکستان نے امن واستحکام کی کوششوں میں بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں،آرمی چیف ، افغان مفاہمتی عمل، داعش کے خلاف اقدامات پر سیر حاصل گفتگو ،افغان صدر نے دیرپا امن واستحکام کے لئے تعاون پرآرمی چیف کا شکریہ اداکیا
کابل:۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ اور افغان صدر اشرف غنی کے درمیان ملاقات کا منظر

کابل:۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ اور افغان صدر اشرف غنی کے درمیان ملاقات کا منظر

راولپنڈی(الاخبار نیوز) آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کابل کے دورے کے بعد وطن لوٹ آئے ہیں، اس دورے میں انھوں نے افغان صدر اور چیف ایگزیکٹو سے اہم ملاقات کیں۔پاک فوج کے شعبہ برائے تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف نے اس دورے میں اشرف غنی اور عبداللہ عبداللہ کے علاوہ اتحادی فوج کے سربراہ جان نکلسن سے بھی ملاقات کی۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے امن کے لئے اقدامات پرافغان حکام کو مبارک باد دی۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے واضح کیا کہ پاکستان افغانستان میں دیرپا امن کا خواہاں ہے، پاکستان نے امن واستحکام کی کوششوں میں بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق ان ملاقاتوں میں افغان مفاہمتی عمل، داعش کے خلاف اقدامات پر بھی گفتگو اور تبادلہ خیال ہوا۔آرمی چیف نے کہا کہ اب سماجی اوراقتصادی ترقی کے لئے قدم بڑھا رہے ہیں، پاک افغان بارڈرپر باڑ دہشت گردوں کی نقل وحرکت روکنے کے لئے ہے۔افغان صدر نے دیرپا امن واستحکام کے لئے تعاون پرآرمی چیف کا شکریہ ادا کیا۔ افغان صدرنے علاقائی ترقی، سیزفائر سے متعلقہ امورپربھی گفتگو کی۔ یاد رہے کہ آرمی چیف نے افغان صدر اشرف غنی کی دعوت پر کابل کا ایک روزہ دورہ کیا تھا۔

Scroll To Top