غلام اکبر ٹویٹر پر!

twitter-logoٹویٹر لوگو ٹویٹ لوگوہم جس دور میں رہ رہے ہیں وہ سوشل میڈیا کا دور ہے۔۔۔ اور سوشل میڈیا میں ” ٹوئیٹر“ نے ” فیس بک“ کے ساتھ ساتھ مرکزی حیثیت اختیار کرلی ہے۔۔۔ بڑے بڑے لیڈر اپنی سوچ اور اپنے فیصلوں کو عوام۔۔۔ بلکہ دُنیا تک پہنچانے کے لئے ” ٹوئیٹر‘ ‘ کا استعمال کررہے ہیں۔۔۔ اس کالم کے ذریعے ہفتہ میں دو مرتبہ میرے ٹویٹس قارئین کی دلچسپی کے لئے پیش کئے جائیں گے۔۔۔ ٹویٹ محدود الفاظ میں بات کرنے کا میڈیم ہے۔۔۔ اگر یہ کہا جائے تو غلط نہیں ہوگا کہ ہر ٹویٹ ایک مختصر کالم ہوتا ہے۔۔۔
۔ ۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اطلاع ہے کے کہ کالاباغ ڈیم کے مخالفین نے بھارتی نیتاو¿ں سے خفیہ طور پر مطالبہ کیا ہے کہ ان کے فنڈز میں معقول اضافہ کیا جا ئے ورنہ وہ کالا باغ ڈیم کی مخالفت ترک کر دیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
صدر نون لیگ میاں شہباز پا رٹی ٹکٹ کے لئے پارلیمانی بورڈ کے سامنے پیش ہوئے۔ مریم نے کہا ہے کہ ایسا صرف نون لیگ میں ہو سکتا ہے۔شاباش مریم یہ چودھری نثار کو لال جھنڈی دکھانے کا زبردست فارمولا ہے۔
۔ ۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
باپ بیٹی کو فوج اور عدلیہ دونوں نے سخت مایوس کیا ہے۔فوج نے خلائی مخلوق جیسے طعنوں اور الزامات سے مشتعل نہ ہو کر اور عدلیہ نے بار بار گالیوں کا جواب صبروتحمل سے دے کر۔جس بیانیہ پر میاں اور مریم کا سارا انحصار تھا وہ اب پھٹا ہوا غبارہ بن چکا ہے۔اور اب خالی کرسیوں سے خطاب کر رہے ہیں۔
۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
گذشتہ دس برس میں پروٹوکول وغیرہ پر جتنی رقم خرچ ہوئی ہے اس سے ایک بڑا ڈیم تو بن ہی سکتا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نواز شریف نے اصغرخان کیس میںبالآخر یہ حلفیہ بیان جمع کرا دیا ہے کہ انہوں نے 35 لاکھ کی رقم وصول نہیں کی تھی۔اس کا مطلب یہ ہوا کہ رقم کم یا زیادہ ہو سکتی تھی۔اس زمانے میں پانچ ہزار کا نوٹ نہیں ہوتا تھا۔اور بڑی رقم گننے کا وقت میاں صاحب کے پاس کہاں تھا!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
میری نسل نے دو باردھوکہ کھایا۔پہلی بار جب ہم اس پروپیگنڈے کے سحر میں گرفتار ہوئے کہ ایوب کے جاتے ہی غریب کی تقدیر بدل جائے گی-ایوبی آئین کا خاتمہ سقوط ڈھاکہ کا باعث بنا۔پھر ہم نے خود کو یہ یقین دلا لیا کہ دودھ کی نہریں بہنے کے راستے میں مشرف حائل تھا۔ہم ایک سوراخ سےددو مرتبہ ڈسے گئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
وکلاءکی جس تحریک نے جسٹس چودھری کو ہیرو اور جنرل مشرف کو زیرو بنایا وہ پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی ویسی ہی بین الاقومی سازش تھی جیسی سازش آج پاکستان کی فوج کو فساد کی جڑ ثابت کرنے کے لئے ہو رہی ہے۔نواز شریف دونوں سازشوں کا مرکزی کردار ہیں۔دس برس میں ملک برباد ہو گیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
میں مشرف کا بڑا مخالف تھا کیوں کہ وہ امریکہ کے ساتھ ہو گئے۔ میں وکلا تحریک کا پرجوش حامی بھی اسی لئے بنا۔ہمارے ساتھ کتنا بڑا دھوکہ ہوا! مشرف اپنی تمامتر کوتاہیوں کے باوجود محب وطن تھے۔غدار وہ شخص نکلا جو مودی کا یار کہلاتا ہے۔

Scroll To Top