امن دشمن مذموم مقاصد کی تکمیل کیلئے فوج اور عوام کو نشانہ بنارہے ہیں: جنرل زبیر محمودحیات

  • وطن عزیز کو درپیش چیلنجز سے نمٹنے کیلئے مسلح افواج اور عوام ایک صفحے پر ہیں،لیفٹیننٹ جنرل(ر) ظہیر الاسلام چیئرمین سی جی ایس ایس
  • سی جی ایس ایس کے زیر اہتمام وطن عزیز کو درپیش خدشات بارے منعقدہ بین الاقوامی کانفرنس سے ڈاکٹر اشفاق حسن خان و دیگر کا خطاب
اسلام آباد:۔ سی جی ایس ایس کے زیر اہتمام عالمی کانفرنس کے شرکاء کا گروپ فوٹو

اسلام آباد:۔ سی جی ایس ایس کے زیر اہتمام عالمی کانفرنس کے شرکاء کا گروپ فوٹو

اسلام آباد(ریاض اے ملک ) جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی کے چیئرمین جنرل زبیر محمود حیات نے دشمنوں کے مذموم ایجنڈے کوشکست دینے کیلئے انصاف کے متفقہ منظم اورجامع نظام کی ضرورت پرزوردیا ہے۔ جمعہ کے روز اسلام آباد میں پاکستان کو درپیش کمپاﺅنڈ ، ہائبرڈ اور گرے زونز کے خطرات کے موضوع پرایک بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک دشمن عناصر پاکستان کو عالمی سطح پر تنہا کرنے کیلئے ہرطرح کے حربے استعمال کررہے ہیں۔جنرل زبیر محمود حیات نے کہا کہ امن دشمن عناصر پاکستان کی مسلح افواج اور عوام کو اپنے مذموم عزائم کے حصول کیلئے نشانہ بنارہے ہیں۔۔۔ہماری سرحدوں کے قریب ہی دہشت گردوں کی تربیت فراہم کی گئی،گرے ہائبرڈ جنگی طریقہ کار کو ایک مخصوص وقت تک محدود کرنا ضروری ہوتا ہے،دراندازی ، سائبر خطرات، مسلح افواج، ریاست اور ریاستی اداروں پر عدم اعتماد کو اس طریقہ میں فروغ دیا جاتا ہے دریں اثناءسابق ڈی جی آئی ایس آئی اور لیفٹننٹ جنرل ظہیر اسلام نے کہا ہے کہ پاکستان کو کئی طرح کے سلامتی کے چیلنجز درپیش ہیں،ان میں سی پیک کو کھلے خطرے سمیت دہشت گردی،میڈیا کی جنگ وغیرہ ہےں۔ اپنے خطاب میں انہوں نے کہاکہ عالمی و علاقائی سلامتی کے چیلنجز اور تقاضے تیزی سے تبدیل ہو رہے ہیں،آج کی دنیا میں جنگوں میں کئی حربی طریقہ کار استعمال کیے جاتے ہیں،ان حربی طریقہ کار میں ہائبرڈ،سائیٹ ،پروپیگینڈا و دیگر نفسیاتی جنگ کے طریقہ کار بھی شامل ہیں،پاکستان کو کئی طرح کے سلامتی کے چیلنجز درپیش ہیں۔

Scroll To Top