ہمہ تن گوش کی ڈائری

 

huma-tan-goshہمہ تن گوش کی ڈائری25-05-208
”میرے خواب میں تو جنرل باجوہ کے سوا اور کوئی نہیں آتا بیٹی۔۔۔ میری قسمت ہی خراب ہے ۔۔۔“

ہم نے بیانک بیٹریوں کو چارج کیا اور انہیں اپنے کانوںکے ساتھ فِٹ کرکے فریکوئنسی سیٹ کی ۔۔۔ہماری منزلِ مقصود میاں نوازشریف کی آواز تھی۔۔۔ ہماری رسائی فوراً ہی ہوگئی۔۔۔ وہ بڑی پژمردہ آوا ز میں بول رہے تھے۔۔۔
” بیٹی میری چّھٹی حس کوئی اچھا پیغام نہیں دے رہی ۔۔۔ میرا دل ڈوب رہاہے۔۔۔ مجھے لگ رہا ہے کہ ہمارا کوئی فائر نشانے پر نہیں لگ رہا ۔۔۔ ہم نے ممبئی والا معاملہ اس امید پر اٹھایا تھا کہ یہ لوگ بھاگے آئیں گے اورہمارے سامنے ہاتھ جوڑ دیں گے۔۔۔ امید یہ بھی تھی کہ صدر ٹرمپ ہمیں فون کرکے ہمیں سچ و حق کی بات کرنے پر مبارکباد دیں گے۔۔۔ لیکن کچھ نہیں ہوا۔۔۔ آج تو میں ہر الزام پاک فوج پرلگا آیاہوں اور دھمکی بھی دے دی ہے کہ اگر میرے آنسو نہ پونچھے گئے تو میں سب کی چیخیں نکلوا دو ںگا۔۔۔ لیکن کسی نے فون تک نہیں کیا کہ بات آگے بڑھے۔۔۔ مجھے نہیں لگ رہا کہ جے آئی ٹی کے ارکان کو برا بھلا کہہ کر اور پی ٹی آئی کے ساتھ ان کی رشتہ داریاں ثابت کرکے اپنے آپ کو بچا سکیں گے ۔۔۔“
” آپ کیوں ہمت ہار رہے ہیں ابا حضور ۔۔۔ مجھے یقین ہے کہ امریکہ ہمیں اکیلا نہیں چھوڑے گا۔۔۔ وہ تو ڈاکٹر شکیل آفریدی کے لئے اس قدر تڑپ رہا ہے۔۔۔ ہم تو پھر بھی کہیں زیادہ کا رآمد ثابت ہوسکتے ہیں امریکہ کے لئے ۔۔۔ مجھے تو انکل مودی پربھی بڑا بھروسہ ہے ۔۔۔ “ یہ مریم کی آواز تھی ۔۔۔
” اپنی کسی تقریر میں یہ بات نہ کہہ دینا کہ تمہیں انکل مودی پر بڑا بھروسہ ہے۔۔۔“ میاں صاحب بولے۔۔۔
” میں ہر بات سوچ سمجھ کر کرتی ہوں ابا حضور ۔۔۔ یہ حکمت عملی میری ہی ہے کہ جے آئی ٹی کے ارکان کو جانب دار اور متعصب ثابت کیا جائے۔۔۔“ مریم بولی ۔۔۔
” ایسا کرنے سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کی ملکیت کے حوالے سے جو سوال اٹھے ہوئے ہیں اُن کا تسلی بخش جواب تو جج کو نہیں مل جائے گا۔۔۔“ یہ میاں صاحب کی آواز تھی۔۔۔
” پھر بھی جے آئی ٹی کے ارکان کو ٹارگٹ کرتے رہنے کا بڑا فائدہ ہے ابا حضور۔۔۔“یہ مریم کی آواز تھی۔۔۔
” کیا فائدہ ہے۔۔۔ ہم نے جے آئی ٹی کی تشکیل کے فیصلے پر مٹھائیاں اس امید پر بانٹی تھیں کہ اپنی مرضی کے آدمی اس میں ڈال سکیں گے۔۔۔ لیکن انہوں نے ڈھونڈھ ڈھونڈھ کر ایسے آدمی ڈالے جنہیں نہ تو ہم خرید سکے اور نہ دھمکا سکے ۔۔۔ میرا خیال تھا کہ نہال ہاشمی والی ویڈیودیکھ کر بلال رسول ` واجد ضیاءاور عامر کیانی وغیرہ کا خون خشک ہوجائے گا۔۔۔ لیکن ہمارا کوئی حربہ کامیاب نہیں ہوا۔۔۔ “ میاں صاحب بولے۔۔۔
” یہ حربہ ضرور کامیاب ہوگا کہ ثابت کریں کہ سارے کے سارے جانبدار ہیں۔۔۔“ مریم نے کہا۔۔۔
” جواب میں یہ کہا جائے گا کہ جے آئی ٹی ایسے آدمیوں کی نہیں بنائی جایا کرتی جو ملزموں سے رشتہ داریاںاور محبتیں رکھتے ہوں۔۔۔ ویسے بھی ہمیں ثابت تو یہ کرنا ہے کہ جو کچھ اِن بدمعاشوں نے ثابت کیا ہے وہ غلط ہے۔۔۔ کیا تم ثابت کرسکتی ہو کہ ٹرسٹ ڈیڈ کی جو دستاویز تم نے جمع کرائی وہ جعلی نہیں ۔۔۔؟ “ یہ میاں صاحب کی آواز تھی۔۔۔ جواب میں مریم نے کہا۔۔۔
” ابا حضور ۔۔۔ کہیں آ پ بھی تو اپنے خلاف نہیں ہوگئے؟۔۔۔ میں یہ کیسے ثابت کروں گی ۔۔۔؟“
” اِسی لئے تو میرادل رہ رہ کر ڈوب رہا ہے ۔۔۔ اوپر سے مجھے ولولہ انگیز تقریریں کرنی پڑتی ہیں۔۔۔ کچھ دنوں سے مجھے طلعت محمود کا یہ گانا بڑا اچھا لگ رہا ہے۔۔۔ اے دل مجھے ایسی جگہ لے چل جہاں کوئی نہ ہو۔۔۔ “ یہ میاں صاحب کی آواز تھی۔۔۔
” جسٹس ثاقب نثار وہاں بھی ہوگا ابا حضور ۔۔۔ کمبخت ہر رات میرے خواب میں آتاہے۔۔۔ “ مریم بولی۔۔۔ جواب میں میاں صاحب نے کہا۔۔۔
” میرے خواب میں تو جنرل باجوہ کے سوا اور کوئی نہیں آتا بیٹی۔۔۔ میری قسمت ہی خراب ہے۔۔۔جس جنرل پر دستِ شفقت رکھا وہی ہمارا دشمن بن گیا۔۔۔“
” کچھ قصور آپ کا بھی ہے ابا حضور۔۔۔ آپ ہر جنرل کو عابد شیر علی سمجھنے لگتے ہیں۔۔۔ “ مریم نے کہا۔۔۔
” بیٹی ۔۔۔ کتنا ہی اچھا ہوتاکہ ہم عابد شیرعلی کو آرمی چیف ۔۔۔ آصف کرمانی کو آئی ایس آئی چیف اور نہال ہاشمی کو چیف جسٹس بناسکتے۔۔۔ یہ میاں صاحب تھے۔۔۔ “
” کیا فوج کی کمان کوئی عورت نہیں سنبھال سکتی اباحضور۔۔۔؟ مریم اورنگزیب میں ساری خوبیاں ہیں۔۔۔“ مریم نے کہا۔۔۔
عین اس وقت فضائی شور نے ہمارا بیانک رابطہ توڑ دیا۔۔۔

Scroll To Top