“رینبو پلان” پاکستانی طلباء کی چینی زبان سیکھنے اور دیگر تدریسی ضروریات کو پورا کرنے میں پیش پیش

پیپلز ڈیلی ،چائنہ

رواں سال اگست میں،چین کے صوبہ ہیبی کی یان شان یونیورسٹی میں زیرِتعلیم محمد نوید احسن اپنی ڈگری مکمل کر کے وطن واپس لوٹنے کو ہے۔ نوید اور اس کے دیگر 53ساتھی طلباءبھی صوبہ ہیبی کے شہر چِھن ہوانگ تاؤ کی یان شان یو نیورسٹی کے اساتذہ اور طلباء کی کاوشوں سے وجود میں آنے والی سماجی تنظیم “رینبو پلان” سے مستفید ہونے والوں میں شامل ہیں۔

“رینبو پلان”کے یہ اراکین  اِن پاکستانی طلباءکے  الفاظ میں  “رینبو  صاحبان  “کے نام سے  پکارے جاتے ہیں۔  “میری رائے کے مطابق ‘رینبو صاحبان  ‘کی فراہم کردہ مدد کی وجہ سے ہمیں اپنے ملک سے دور پردیس میں بھی گھر سا  احساس میسر آیا ہے “،نوید نے کہا۔

اکتوبر  دو ہزار سولہ میں حکومتی وظیفے کے حصول کے بعد 40طلباء چینی زبان کی تربیت حاصل کرنے چین کے صوبہ ہیبی آئے جن کی میزبانی یان شان یو نیورسٹی نے کی ۔ یہاں موجود ایک استاد چیانگ وان چاؤنے دیکھا کہ زبان کی مشکلات کی وجہ سے ان طلباء کو  بہت سے مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے  جن میں سے ایک نمایاں مسئلہ حلال کھانے کی تلاش  تھا۔ ان مسائل کے پیش نظر جناب چیانگ وان چاؤ نے فلاحی تنظیم”رینبو پلان”بنانے کا منصوبہ ترتیب دیا ۔ اس تنظیم نے اس وقت پاکستانی طلباء کو پیش آنے والی ہر مشکل میں مدد فراہم کی۔

 2017میں پاکستانی حکومت نے مزید 40طلباء بھیجے  جو دو سالہ چینی زبان کی تر بیت حاصل کرنے کے بعد وطن واپس جا کر ”دی بیلٹ اینڈ روڈ ”سے متعلقہ مختلف منصوبوں میں خدمات سرانجام دیں گے۔

آج ”رینبو پلان ”کے اراکین کی تعداد تین سو سے تجاوز کر چکی ہے۔ اور آج جب بھی کسی نئے آنے والے پاکستانی طالب علم کو موبائل فون  سم کارڈز ،ہوائی جہاز کے ٹکٹ یا رہائش سے متعلق دیگر مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو اُس کی اِس مشکل کا حل ”رینبو صاحبان”کے نام سے اس کے ذہن میں موجود رہتا ہے۔

“رینبو پلان ”کی بنیاد رکھنے والے اراکین کی بدولت چھ سے نو افراد پر مشتمل  45کے قریب گروپس کی تشکیل کی گئی۔ جس میں سے ہر ایک گروپ میں 2پاکستانی طلباء اور 4سے 7چینی استاتذہ و طلباء شریک ہوئے۔ اسی سلسلہ کو مزید بڑھاتے ہوئے چینی چائے، چینی خطاطی، شاعری اور دیگر فنون لطیفہ کی سرگرمیاں بھی منعقد کی گئیں جن میں سے ایک نمایاں تقریب نئے چینی سال کے موقع پر عشائیہ کی تقریب بھی ہے۔

پنجاب حکومت کی  طے کردہ شرائط کے مطابق گریجو یشن کے لیے تمام پاکستانی طلباء کو ایچ ایس کے5کا امتحان کم ازکم 210نمبر لے کر پاس کرنا ہے۔ سال کی شروعات میں 39میں سے 12پاکستانی طلباء یہ امتحان پاس کر چکے ہیں جومزید ایچ ایس کےچھ اور کاروبار سے متعلق چینی زبان  کو سیکھنے کیلئے مگن ہیں۔

موجود ہ صورتحال کو مد نظر رکھ کر ”رینبو پلان” نے ایچ ایس کے 5اور ایچ ایس کے 6کے علاوہ کاروبار سے متعلق چینی زبان کی تربیت کے لئے تربیت یافتہ افراد کا چناؤ کیا ہے۔جو پاکستانی طلباء کو انفرادی طور پر متعلقہ شعبے کی تربیت میں مدد فراہم کریں گے۔اس کے علاوہ کاروبار سے متعلق چینی زبان کے لئے تجربہ کار اساتذہ بھی بھرتی کر لئے گئے ہیں۔

Scroll To Top