مقدمات سے جی بھر گیا ہے ۔۔۔

قوم اپنے مجرموں کو تختہ ءدار پر دیکھنا چاہتی ہے ۔۔۔
23مارچ کو یومِ پاکستان کہتے ہیں۔۔۔ لیکن اگر اسے یومِ تجدیدِ عہد وفا“ کہا جائے تو زیادہ مناسب ہوگا۔۔۔
میری اس بات سے آپ کو اگر علامہ اقبال ؒ کا شکوہ اور جواب شکوہ یاد نہیں آیا تو یاد دِلادیتا ہوں۔۔۔
شکوہ میں علامہ اقبال ؒ نے اللہ تعالیٰ کے سامنے شکایات کے انبار لگادیئے ۔۔۔ اور جواب شکوہ میں اللہ کے جواب کو علامہ اقبالؒ نے ان الفاظ میں سمو دیا۔۔۔
” کی محمد ﷺ سے وفا تو نے تو ہم تیرے ہیں
یہ جہاں چیز ہے کیا لوح و قلم تیرے ہیں “
تو 23مارچ محمد ﷺ سے وفا کے اس عہد کی تجدید کا دن ہے جو ہم بحیثیت مسلمان کلمہ پڑھتے وقت کرتے ہیں۔۔۔
ہم کہتے ہیں ۔۔۔ ” کوئی عبادت کے لائق نہیں سوائے اللہ کے ۔۔۔ اور محمد ﷺ اللہ کے رسول ﷺ ہیں۔۔۔ “
اللہ کے آخری رسول ﷺ نے ہمیں کیا پیغام دیا ۔۔۔؟
” آج سے اسلام تمہارا دین ہے ۔۔۔ تم پورے کے پورے اِس میں داخل ہوجاﺅ۔۔۔“
پاکستان صرف ایک مملکت نہیں۔۔۔ اللہ کے آخری پیغمبر ﷺ کے دیئے ہوئے نظامِ حیات کو اختیار کرنے کے عہد کا نام ہے۔۔۔
میرا ایمان ہے کہ آج نہیں تو کل۔۔۔ اِس عہد کی تکمیل ضرور ہوگی۔۔۔
آج تو ہمیں اِس عہد کی تجدید کرنی ہے۔۔۔
آج کے اخبارات میں مجھے پاکستان کے چیف جسٹس جناب ثاقب نثار کا یہ بیان پڑھنے کو ملا ہے۔۔۔ یہ رسمی بیان نہیں۔۔۔ ایک ریمارک ہے جو انہوں نے ایک مقدمے کی سماعت کے دوران دیا ہے۔۔۔
” آئندہ ہفتوں میں ایسے مقدمات بھی دیکھیں گے جنہیں کبھی کسی نے ہاتھ نہیں لگایا۔۔۔“
بڑا مقّدس ارادہ ہے محترم جسٹس ثاقب نثار صاحب۔۔۔
مگر مقدمات کی سماعت سے قوم کا جی بھرتا جارہا ہے۔۔۔
قوم اپنے مجرموں کو تختہ ءدار پر دیکھنا چاہتی ہے۔۔۔

aaj-ki-baat-new

Scroll To Top