پشاور زلمی کے 7 اوورز میں 88 رنز

xمیچ 16،16 اوور تک محدود کردیا گیا ۔فوٹو: پی ایس ایل

  لاہور: پاکستان سپر لیگ تھری کے دوسرے ایلیمینیٹر میچ میں کراچی کنگز نے ٹاس جیت کر پشاور زلمی کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی ہے۔ 

لاہور میں کھیلے جارہے تیسرے پلے آف میچ میں کراچی کنگز کی جانب سے کپتانی کے فرائض انجام دینے والے محمد عامر نے پشاور زلمی کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔ پشاور زلمی کی جانب سے کامران اکمل اور اندرے فلیچر نے اننگز کا آغاز کیا۔

محمد عامر نے پہلے اوور میں صرف 2 رنز دیے لیکن دوسرے اوور میں کامران اکمل نے عثمان شنواری کو شاندار چھکا لگاکر اپنے خطرناک عزائم کا اظہار کیا جب کہ محمد عامر نے اپنے دوسرے اوور میں صرف 3 رنز دیے۔

کامران اکمل نے میچ کے پانچویں اوور میں 25 رنز بٹورے انہوں نے عثمان شنواری کو ابتدائی 5 گیندوں پر 5 باؤنڈریاں رسید کیں جس میں 2 چھکے اور 3 چوکے شامل تھے۔

پشاور زلمی کے دوسرے اوپننگ بلے باز اندرے فلیچر نے بھی کامران اکمل کا بھرپور ساتھ دیتے ہوئے جارحانہ موڈ اپنایا اور روی بوپارا کو بلند وبانگ چھکا رسید کیا۔

پشاور کو بنگلا دیشی اوپنر تمیم اقبال کی خدمات میسر نہیں ہوں گی جو گھٹنے کی انجری کے باعث میڈیکل چیک اپ کے لیے بنکاک روانہ ہوگئے ہیں جب کہ ان کی جگہ کرس جورڈن کو ٹیم کا حصہ بنایا گیا ہے۔

کراچی کنگز کے کپتان عماد وسیم ابھی تک پوری طرح فٹ نہیں ہوئے اور پلیئنگ الیون کا حصہ نہیں ہوں گے ان کی عدم موجودگی میں پہلے ایون مورگن نے کپتان کے فرائض انجام دیے جب کہ آج محمد عامر کو قیادت سونپی گئی ہے، کراچی کنگز کے اسٹار آل راﺅنڈر شاہد آفریدی بھی انجری کے سبب میچ نہیں کھیل رہے۔

شاہد آفریدی کی جگہ جارح مزاج اوپنر مختار احمد کو موقع دیا جائے گا جب کہ عماد وسیم کی جگہ اسامہ میر اسپن بولنگ کے فرائض انجام دیں گے اور محمد عرفان، مشتاق احمد کھولڑو کی جگہ دانش عزیز کو ٹیم میں شامل کیا جائے گا۔

دوسری جانب بارش رکنے کے باعث بہت دیر تک گراؤنڈ خشک کرنے کا کام جاری رہا جس کے باعث میچ تاخیر کا شکار ہوا ۔ گراؤںڈ میں موجود پانی کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے خشک کیا گیا، گراؤنڈ خشک کرنے کیلئے پاک فوج کے ہیلی کاپٹرز سے بھی مدد لی گئی، شائقین نے ہیلی کاپٹرز دیکھ کر پاکستان زندہ باد اور پاک فوج زندہ باد کے نعرے لگائے۔

میچ میں امپائرنگ کے فرائض انجام دینے والے علیم ڈار کا کہنا ہے کہ بارش کے باعث میچ تاخیر کا شکار ہوا جس کے سبب میچ 16،16 اوور تک محدود کردیا گیا۔

 

Scroll To Top