چیئر مین سینٹ کون؟ فیصلہ آج: صادق سنجرانی تحریک انصاف، پیپلز پارٹی کے متفقہ امیدوار

  • پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے بعد چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے بھی عہدے کےلئے صادق سنجرانی کی حمایت کا اعلان کر دیا ، دونوں رہنماﺅں نے اس امید کا اظہار کیا کہ فیصلہ بلوچستان کے عوام کے احساس محرومی کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہوگا
  • ڈپٹی چیئرمین کے لیے ہمارا امیدوار سلیم مانڈوی والا ہو گا، ہمارے امیدوار مسلم لیگ ن کے امیدواروں کا ڈٹ کرمقابلہ کریں گے، بلاول بھٹو، وزیراعلیٰ بلوچستان سے وعدے کے مطابق پیپلز پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین کی حمایت کریں گے،عمران خان

صادق سنجرانی

اسلام آباد(الاخبار نیوز)تحریک انصاف کے بعد پاکستان پیپلز پارٹی نے بھی چیئرمین سینیٹ کے لیے صادق سنجرانی کی حمایت کا اعلان کر دیا۔اسلام آباد میں وزیراعلیٰ بلوچستان کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ن لیگ نے90 فیصد بجٹ پنجاب میں خرچ کیا، ہم چاہتے ہیں فنڈز ہر صوبے میں خرچ ہوں اور بلوچستان میں جو احساس محرومی ہے اس کا خاتمہ ہو۔بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لیے ہمارا امیدوار سلیم مانڈوی والا ہو گا اور ہمارے امیدوار مسلم لیگ (ن) کے امیدواروں کا مقابلہ کریں گے چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ رضاربانی کے لیے 2018 کے الیکشن میں دوسرا پلان ہے اور اپنے سینیٹرز کی تعداد بتانا چیٹنگ ہو گی اور ن لیگ کو معلوم ہو جائے گا۔اس موقع پر وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے بلوچستان کے لیے قربانی دینے کی تاریخ میں رقم کر دی ہے ۔۔تحریک انصاف اور بلوچستان کے آزاد سینیٹرز نے صادق سنجرانی کو بطور چیئرمین سینیٹ امیدوار نامزد کرنے کا فیصلہ کرلیا۔وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدس بزنجو کی قیادت میں بلوچستان کے آزاد سینیٹرز کا وفد بنی گالہ پہنچا جہاں انہوں نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے ملاقات کی۔ اس موقع پر چیئرمین سینیٹ کے لئے پی ٹی آئی اور بلوچستان کے آزاد سینیٹرز کے متفقہ امیدوار صادق سنجرانی اور انوار الحق کاکڑ بھی موجود تھے۔ترجمان تحریک انصاف کے مطابق ملاقات کے دوران صادق سنجرانی کی متفقہ طور پر چیئرمین سینیٹ نامزدگی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔عمران خان نے کہا کہ ذاتی مفادات سے بالاتر ہو کر ملک کے مستقبل کے لئے محنت کی ضرورت ہے، وزیراعلیٰ بلوچستان سے وعدے کے مطابق پیپلز پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین کی حمایت کریں گے۔چیئرمین تحریک انصاف کا مزید کہنا تھا کہ جمہوریت کی ساکھ بچانے کے لئے شریف خاندان کا مقابلہ ضروری ہے اور بلوچ عوام سے احساس محرومی ختم کرنے کے لئے غیرمعمولی اقدامات کرنے ہوں گے۔وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کا کہنا تھا کہ عمران خان کے فیصلے سے وفاق اور پاکستان مضبوط ہوگا، پیپلز پارٹی ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لئے اپنا امیدوار نامزد کرے ہم حمایت کریں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے پیپلز پارٹی اور دیگر جماعتوں سے رابطوں کے حوالے سے عمران خان کو آگاہ کیا۔

Scroll To Top