وزیراعظم کے خاندان کا وزارت پٹرولیم پر قبضہ، افسران کا احتجاج کا فیصلہ

  • شاہد خاقان عباسی کے بیٹے کی طرف سے وزارت کے معاملات میں مسلسل دخل اندازی پر افسران شدید دبا¶ کا شکار ،سیکرٹری پٹرولیم کو آگاہ کرنے کا فیصلہ
  • وزیر اعظم وزارت سے متعلق اہم فائلیں رات کو گھر منگواتے ہیں اور آئل کمپنیوں سے ڈیل اور مک مکا کرتے ہیں،ذرئع

شریف خاندان

اسلام آباد(آن لائن)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے بڑے بیٹے علی کی طرف سے وزارت پٹرولیم کے معاملات میں مسلسل دخل اندازی سے افسران شدید دبا¶ کا شکار ہیں اور سیکرٹری پٹرولیم کو باضابطہ آگاہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزارت پٹرولیم کے افسران نے حکومتی معاملات میں وزیراعظم کے بیٹے کی مسلسل دخل اندازی جاری ہے،بالخصوص پی ایس او حکام سوئی سدرن،سوئی نادرن اور او جی ڈی سی ایل کے معاملات میں وزیراعظم کا بیٹا مسلسل دخل اندازی کر رہا ہے۔ وزیراعظم  شاہد خاقان عباسی نے یہ وزارت اپنے پاس رکھی ہوئی ہے کیونکہ اس وزارت میں اربوں روپے کے منصوبے جاری ہیں جہاں سے وزراء ہمیشہ اربوں کی دیہاڑی لگاتے ہیں۔وزارت پٹرولیم کے اعلیٰ افسران نے نام ظاہر نہ کرنے پر بتایا کہ وزارت پٹرولیم پر شاہد خاقان عباسی کے خاندان کے افراد نے قبضہ جما رکھا ہے۔وزیراعظم کا پی ایس حافظ نامی وزارت پٹرولیم میں ان داتابنا ہوا ہے،ان افسران نے فیصلہ کیا ہے کہ تمام حالات کے بارے میں سیکرٹری پٹرولیم کو آگاہ کیا جائے گا۔ذرائع نے بتایا ہے کہ شاہد خاقان عباسی وزارت کی اہم فائلیں رات کو گھر منگواتے ہیں اور گھر میں آئل کمپنیوں سے ڈیل اور مک مکا کرتے ہیں۔

Scroll To Top