نا اہل نواز شریف کا عدالتی فیصلے کیخلاف اعلان بغاوت

  • آئندہ کسی کو ووٹ پاﺅں تلے روندنے کی اجازت نہیں دیں گے، تہیہ کر لیا ہے کہ ووٹ کی عزت کرائینگے
  • مخالفین نے ہمیشہ ٹانگیں کھینچیں اب ان کی ٹانگیں عوام نے کھینچنی ہیں ،اپنا حق نہ ملے تو اسے چھین لیں، جلسے سے خطاب

نواز شریف

بہاولپور (این این آئی)سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن)کے قائد محمد نوازشریف نے کہاہے کہ ستر سال سے جو کچھ ہورہاہے اس سے بغاوت کرتا ہوں ، گھبرانے کی بات نہیں سب ٹھیک ہو جائیگا ،کہتے ہیں ہمیشہ کےلئے ناہل کرنا ہے، کیا عوام کو منظور ہے؟پاکستان اس وقت تک قابل نہیں بن سکتا جب ہم 70 سالوں کی تاریخ کو نہیں بدلیں گے ،ہمارے آئندہ 70 سال پچھلے 70  سالوں سے بہت بہتر ہونے چاہئیں اور وہ تب بہتر ہوں گے جب ہم اپنا حق مانگیں گے ،مخالفین نے ہمیشہ ٹانگیں کھینچیں اب ان کی ٹانگیں عوام نے کھینچنی ہیں ،اپنا حق نہ ملے تو اسے چھین لیں، ہم یہ طے کریں گے کہ اپنے ووٹ کی عزت کرائیں گے، یہ عوام کا مجھ سے وعدہ ہونا چاہیے، نوازشریف وہ وعدہ نہیں کرتا جو پورا نہ کرسکے ،عوام وعدہ کریں ہم آئندہ کسی کو بھی ووٹ کو پاﺅں تلے روندنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔یہاں جمعہ کو جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نوازشریف نے کہاکہ یہ جلسہ نہیں جشن ہے ، اس جلسے کو دیکھ کر مخالفین کے ہوش اڑ گئے ہیں یہ تو الیکشن سے پہلے الیکشن ہوگیا ، ایسا جلسہ ، ایسا سماں میں نے پہلے کبھی نہیں دیکھا ، بہاولپور نے اگست 2018ءسے پہلے ہی فیصلہ سنا دیا ہے ۔انہوںنے کہاکہ بہاولپور میرا دوسرا گھر ہے ، بہاولپور میرا اپنا شہر اور ضلع ہے مجھے بہاولپور سے پیار ہے ،بہاولپورایک نئی تاریخ رقم کررہاہے ۔انہوں نے کہاکہ پانچ سال پہلے کیا ہوتا تھا ، بجلی غائب ہوتی تھی ، آج فیکٹریاں چل رہی ہیں ، آج ٹیوب ویل چل رہے ہیں ہم نے پاکستان کا بہت بڑا مسئلہ حل کیا ہے ۔انہوںنے کہاکہ صرف ٹیوب ویل نہیں چل رہے ہیں بلکہ بجلی بھی سستی مل رہی ہے۔انہوںنے کہاکہ ہم نے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کیا ہے یہ کوئی معمول نہیں کیا ، دہشتگردی کی کمر توڑ کر رکھی ہے ، ہم نے کھیتوں سے منڈیوں تک سڑکیں بنائی ہیں انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ نون اور نوازشریف نے بڑے مسائل حل کئے ہیں انہوںنے کہاکہ ہم نے کھاد کوسستا کیا ، مہنگائی اور دہشتگرد ی کی کمر توڑ دی ہے ۔انہوںنے کہاکہ سستی بجلی کے ساتھ غریب طبقہ خوشحال ہورہاہے ۔انہوںنے کہاکہ ہم نے موٹر ویز اور ہائی ویز بنائے ہیں ، بہاولپور والو !صرف دوماہ بعد چھ رویہ سڑک لاہور لیکر جائےگی انہوںنے کہاکہ کسی اور پارٹی نے کبھی کوئی موٹر وے اس ملک میں بنائی ؟سابق وزیر اعظم نے کہاکہ پیپلز پارٹی اور یا پی ٹی آئی میں سے کسی نے ملک میں موٹر وے بنائی ؟۔کیا پیپلز پارٹی یا کسی اور جماعت نے بجلی گھر بنائے ؟کیا پیپلز پارٹی یا پی ٹی آئی نے ملک میں دہشتگردی ختم کی ؟انہوںنے کہاکہ اس ملک میں کیا کسی اور نے اتنے بجلی کے کارخانے لگائے ہیں ؟انہوںنے کہاکہ میں نے جب بھی کوئی وعدہ کیا اسے پورا کیا ۔انہوںنے مخالفین پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ پچھلے چار سالوں میں مخالفین نے کچھ کرنے نہیں دیا، کبھی دھرنے، جلسے جلوس اور کبھی عدالتوں میں گئے ، یہ لوگ صرف ٹانگیں کھینچنے والے ہیں ان کی ٹانگیں عوام نے کھینچنی ہیں ۔انہوںنے کہاکہ شہباز شریف کی جنوبی پنجاب کےلئے خدمات کی کوئی مثال نہیں ملتی ، شہباز شریف نے صوبے میں بے مثال خدمت کی ہے، جگہ جگہ سکول ، سڑکیں بنائی ہیں ہم تو بہاولپور پر قربان ہیں میں بھی قربان ہوں شہباز شریف بھی قربان ہے ۔ سابق وزیر اعظم نے کہاکہ مجھے اس لئے نکالا گیا کہ میں نے بیٹے سے تنخواہ نہیں لی ۔انہوںنے کہاکہ کیا آپ کو جائز لگتا ہے کہ بیٹے سے تنخواہ نہ لو تو وزیر اعظم کی چھٹی کرادی جائے ۔انہوںنے کہاکہ آپ کومعلوم ہے ناں ، میرے ساتھ کیاسلوک کیا گیا ؟میں نے اپنے بیٹے سے تنخواہ نہیں لی تو مجھے نکال دیا گیا ۔ سابق زیر اعظم نے کہاکہ کیا میری نا اہلی کا فیصلہ آپ کو منظور ہے جس پر کارکنوں نے نا منظور کے نعرے لگائے ۔ انہوں نے کہا کہ کہتے ہیں تم وزارت عظمیٰ سے نااہل ہو، کہتے ہیں ہمیشہ کےلئے ناہل کرنا ہے، کیا عوام کو یہ منظور ہے؟۔میاں نوازشریف نے کہا کہ ملک کے ساتھ 70 سالوں سے ظلم ہوا، ہماری نسلوں کے ساتھ ظلم ہوئے ہیں، ہم نے 70 سالوں میں بہت ٹھوکریں کھائی ہیں۔انہوںنے کہاکہ ستر سال میں پاکستان کو برباد کر نے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی ، میں ستر سال کی پالیسیوں سے بغاوت کا اعلان کرتا ہوں ۔مسلم لیگ (ن) کے قائد کا کہنا تھا کہ پاکستان اس وقت تک قابل نہیں بن سکتا جب ہم 70 سالوں کی تاریخ کو نہیں بدلیں گے، آپ کا مستقبل روشن کرنے کے لیے ہر وہ کام کروں گا جو آپ کے مستقبل تابناک کرے، ہمارے آئندہ 70 سال پچھلے 70 سالوں سے بہت بہتر ہونے چاہئیں اور وہ تب بہتر ہوں گے جب ہم اپنا حق مانگیں گے۔انہوںنے کہاکہ اپنا حق نہ ملے تو اسے چھین لیں، ہم یہ طے کریں گے کہ اپنے ووٹ کی عزت کرائیں گے، یہ عوام کا مجھ سے وعدہ ہونا چاہیے، نوازشریف وہ وعدہ نہیں کرتا جو پورا نہ کرسکے، 70 سالوں سے ووٹ پاو¿ں تلے روندتے رہے ہیں، عوام وعدہ کریں ہم ا?ئندہ کسی کو بھی ووٹ کو پاﺅں تلے روندنے کی اجازت نہیں دیں گے۔انہوںنے کہاکہ آئیے ہم طے کریں کہ ہم اپنے ووٹ کی عزت کرائیں گے ۔انہوںنے نو جوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ انشاءآپ کو مایوس نہیں کرونگا ، انشا ءاللہ آپ کو آپ کا حق دلاﺅنگا ۔انہوںنے کہاکہ گھبرانے کی بات نہیں سب ٹھیک ہو جائیگا۔نوازشریف نے شرکاءسے وعدہ کریں ووٹ کا احترام کراﺅ گے ؟ووٹ کو عزت دو گے ؟جس پر کارکنوں نے نوازشریف کے حق میں نعرے لگائے ۔انہوںنے کہاکہ ہم ایسی پالیسی بنارہے ہیں جس میں سب کو اپنے گھر ملیں گے ، ان تمام لوگوں کو گھر دینگے جس کے پاس اپنے گھر نہیں ۔انہوںنے کہاکہ ظلم کا خاتمہ کرینگے جو کئی کئی سال چلتا رہتا ہے انہوںنے کہاکہ شہریوں کو ان کی دہلیزپر انصاف ملنے کی پالیسی بنا رہے ہیں انہوںنے کہاکہ وہ پروگرام دونگا جس سے پاکستانیوں کا مستقبل تابناک رہے آپ وعدہ کریں اپنے ووٹ کی عزت اور توقیر کرائیں گے ۔

Scroll To Top