نیب کا وزارت داخلہ کو خط: نواز شریف، مریم اور کیپٹن صفدر کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے

  • قومی احتساب بیورو کی طرف سے نااہل وزیر اعظم کے خلاف فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز سے متعلق 2 ضمنی ریفرنسز دائر ، استغاثہ کے آٹھ ، آٹھ نئے گواہان شامل
  • دونوں ریفرنسز میں نواز شریف سمیت ان کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز بھی ملزم نامزد ہیں،حسن اور حسین نواز کی آف شور کمپنیوں کی نئی تفصیلات بھی ضمنی ریفرنسز کا حصہ ہیں
نواز شریف، مریم اور کیپٹن صفدر کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے

نواز شریف، مریم اور کیپٹن صفدر کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے

اسلام آباد (این این آئی+الاخبار نیوز)قومی احتساب بیورو (نیب) نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سربراہ ،سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کا نام ایگزیٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالنے کےلئے وزارت داخلہ کو خط لکھ دیئے ہیں ۔میڈیا رپورٹ کے مطابق بدھ کو نیب ہیڈ کوارٹر کی  جانب سے وزارت داخلہ کو دو الگ الگ خط لکھے گئے ہیں ،ایک خط میں سابق وزیر اعظم نواز شریف جبکہ دوسرے خط میں مریم نواز اور ان کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا کہا گیا ہے۔دوسری جانب قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف 2 ضمنی ریفرنسز دائر کردیے۔احتساب عدالت میں نیب کی جانب سے فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز سے متعلق ضمنی ریفرنسز دائر کیے گئے ہیں۔ نیب نے دونوں ضمنی ریفرنسز میں 8،8 نئے گواہ شامل کیے ہیں۔ دونوں ریفرنسز میں نواز شریف سمیت ان کے صاحبزادے حسن اور حسین نواز بھی ملزم نامزد ہیں۔حسن اور حسین نواز کی آف شور کمپنیوں کی نئی تفصیلات بھی ضمنی ریفرنسز کا حصہ ہیں۔نیب کی جانب سے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس (لندن فلیٹس) ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں حسن اور حسین نواز، بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کو ملزم ٹھہرایا گیا ہے۔دوسری جانب العزیزیہ اسٹیل ملز جدہ اور 15 ا?ف شور کمپنیوں سے متعلق فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں نواز شریف اور ان کے دونوں بیٹوں حسن اور حسین نواز کو ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

Scroll To Top