ایم کیو ایم ٹوٹ گئی: فاروق ستار فارغ، خالد مقبول صدیقی کے نئے کنوینئر

  • فاروق ستار نے دھوکے سے خود کو پارٹی سر براہ بنایا، تنظیم کے اندر پسند نا پسند، اقربا پروری اپنے عروج پر ہے،مطلق العنانی کے ذریعے سارے کام کیے جارہے ہیں،کنور خالد جمیل
  • یہ کہنا کہ ہم سینیٹ کے ٹکٹوں پر لڑ رہے ہیں درست نہیں ہمیں سینیٹ و قومی اسمبلی کے ٹکٹوں سے کوئی غرض نہیں سارے ٹکٹ انہیں ہی مبارک ہوں یہ عمل کبھی ہمارے مطمع نظر نہیں رہا، خالد مقبول صدیقی

عدالت نے ڈی جی رینجرز سندھ کو فاروق ستار کی گرفتاری کا حکم دے دیا

کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے فاروق ستار کو پارٹی کنوینر کے عہدے سے برطرف کرتے ہوئے خالد مقبول صدیقی کو کنوینر مقرر کردیا۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق اس بات کا اعلان رابطہ کمیٹی کے ارکان نے بہادر آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر عامر خان، خالد مقبول صدیقی، کنور نوید جمیل، نسرین جلیل اور دیگر متحدہ رہنما موجود تھے۔ ایم کیو ایم بہادر آباد گروپ نے کہا کہ یہ فیصلہ ہمارے لیے بہت تکلیف ہے لیکن ہم مجبور ہیں اور فاروق ستار کو متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی کنوینر شپ سے برطرف کرنے کا اعلان کرتے ہیں۔ڈپٹی کنوینر نے کہا کہ رابطہ کمیٹی کے بار بار کہنے کے باوجود پارٹی کے گوشوارے جمع نہیں کرائے گئے جس پر الیکشن کمیشن میں ایم کیو ایم کی پارٹی رجسٹریشن منسوخ ہوگئی تھی اس ساری غلطی کی ذمہ داری فاروق ستار پر عائد ہوتی ہے،فاروق ستار نے رابطہ کمیٹی کے اختیارات کئی بار استعمال کیے،ایسی بہت ساری باتیں ہیں تاہم صرف چند فیصد آپ سے شیئر کی جارہی ہیں درحقیقت فاروق ستار نے دھوکے سے خود کو پارٹی کا سر براہ بنایا۔کنور خالد جمیل نے کہا کہ تنظیم کے اندر پسند نا پسند، اقربا پروری اپنے عروج پر ہے، مطلق العنانی کے ذریعے سارے کام کیے جارہے ہیں، فاروق ستار کے غلط کاموں کو محض انہیں منانے اور پارٹی نہ توڑنے کی خاطر تسلیم کیا، ہمیں یہ اعلان کرتے ہوئے تکلیف ہورہی ہے کہ فاروق ستار آج سے کنوینر نہیں بلکہ پارٹی کے محض ایک کارکن ہیں، رابطہ کمیٹی کا جلد اجلاس منعقد ہوگا جس میں طے کیا جائے گا کہ اگلا کنوینر کون ہوگا۔خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ یہ کہنا کہ ہم سینیٹ کے ٹکٹوں پر لڑ رہے ہیں درست نہیں ہمیں سینیٹ و قومی اسمبلی کے ٹکٹوں سے کوئی غرض نہیں سارے ٹکٹ انہیں ہی مبارک ہوں یہ عمل کبھی ہمارے مطمع نظر نہیں رہا۔خیال رہے کہ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان دو دھڑوں میں تقسیم ہوچکی ہے ایک دھڑے کی قیادت پارٹی کنوینر و سربراہ فاروق ستار جب کہ دوسرے دھڑے کی قیادت ڈپٹی کنوینر عامر خان کررہے ہیں جن کے ساتھ رابطہ کمیٹی کے بڑی اکثریت میں 20 ارکان موجود ہیں۔ فاروق ستار بحیثیت سربراہ ان 20 ارکان کو شوکاز نوٹس جاری کرچکے ہیں جس میں ان سے وضاحت طلب کی گئی ہے کہ وہ بتائیں کہ ڈپٹی کنوینر کامران ٹیسوری کو کس بات پر معطل کیا گیا۔یہ بھی یاد رہے کہ پارٹی میں اندرونی اختلافات کئی ماہ سے جاری تھے تاہم یہ اختلافات اس وقت میڈیا پر منظر عام پر ا?ئے جب کامران ٹیسوری کو سینیٹ کا ٹکٹ دینے کا معاملہ ہوا تو یہ اختلافات دھڑے بننے کا سبب بن گئے۔

Scroll To Top