توہین عدالت: نواز شریف ، مریم نواز کیخلاف درخواست سماعت کیلئے منظور

  • نااہل وزیر اعظم اور ان کی صاحبزادی اپنے عوامی خطابات اور بیانات میں علی الاعلان اعلیٰ عدلیہ کےخلاف نفرت پھیلا رہے ہیں ، توہین عدالت کی کارروائی کی جائے ، درخواست گزار
  • اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے مدعی عدنان اقبال کی درخواست کی سماعت کی جس میں نواز شریف، مریم نواز،پیمرا اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے

مریم نواز

اسلام آباد(این این آئی)اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کے خلاف توہین عدالت کی درخواست سماعت کیلئے منظور کرلی ۔پیر کواسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے مدعی عدنان اقبال کی درخواست کی سماعت کی جس میں نواز شریف، مریم نواز، الیکٹرانک میڈیا کے نگراں ادارے پیمرا اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ پاناما فیصلے میں نااہل قرار پانے اور وزارت عظمیٰ سے برطرفی کے بعد نواز شریف اور مریم نواز عدالتوں کے خلاف نفرت پھیلا رہے ہیں۔ دونوں سیاسی رہنماو¿ں نے کوٹ مومن جلسے میں اور پنجاب ہاﺅس میں عدلیہ مخالف تقاریر کیں۔درخواست گزار نے استدعا کی کہ نواز شریف اور مریم نواز کے خطابات اور بیانات توہین عدالت کے زمرے میں آتے ہیں، عدالت سے گزارش ہے کہ دونوں فریقوں کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔دریں اثناءلاہور ہائیکورٹ بھی سابق وزیر اعظم نواز شریف،مریم نواز، طلال چوہدری ،کیپٹن (ر)محمد صفدر اور رانا ثنا اللہ کے خلاف توہین عدالت کی ایک اور درخواست دائر کر دی گئی ہے ۔سول سوسائٹی کی آمنہ ملک کی جانب سے دائر درخواست میں وفاقی حکومت اور پیمرا کو بھی فریق بنایا گیا ہے ۔ درخواست گزار نے موقف اپنایا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف اور دیگر لیگی رہنما مسلسل اعلیٰ عدلیہ کی توہین کر رہے ہیں۔ان کے خلاف کارروائی کی جائے

Scroll To Top