شریف خاندان نے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خان ثبوت سامنے لے آئے

  • پارلیمنٹ کی تحضیک کرپٹ پارلیمنٹرین نے کروائی،پارلیمنٹ کےلئے لعنت کا لفظ بہت ہلکا ہے‘ چیئرمین تحریک انصاف
  • شہبازشریف کی طلبی زبردست کام ، نواز شریف کو 300 ارب روپے کا جواب دینا ہے جو اس ملک سے باہر گیا ہے
اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد(صباح نیوز) اسلام آباد: چیرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ شریف خاندان نے اپنے ملازموں اور نوکروں کے زریعے منی لانڈرنگ کی۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا تھا کہ پاناما کے بعد انکشاف ہوا کہ شریف خاندان کی 16 کمپنیاں ہیں، شریف خاندان نے منی لانڈرنگ کا پورا انتظام کررکھا تھا اور 99 کے بعد سے ان کے اثاثوں میں تیزی سے اضافہ ہوا، حدیبیہ پیپز ملز بھی منی لانڈرنگ کے لیے بنائی گئی۔ ان کا کہنا تھا کہ آج کل جو ڈرامہ چل رہا ہے کہ مجھے کیوں نکالا، آج اس کی دوسری قسط پیش کررہا ہوں، انہوں نے دبئی میں کمپنی بنائی ہوئی تھی، یہاں سے پیسہ وہاں بھیجتے تھے اور پھر وہاں سے آگے جاتا تھا، ہل میٹل کمپنی نے 116 کروڑ نواز شریف اور 80 کروڑ مریم نواز کے نام کیے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ شریف خاندان نے اپنے ملازموں اور نوکروں کے ذریعے منی لانڈرنگ کی، یہ لوگ پنجاب پولیس کے کانسٹیبلز کے ذریعے منی لانڈرنگ کراتے رہے، انہوں نے جاتی امرا کے ڈرائیور پنوں سے 5 کروڑ ایک شخص کو بھجوائے جب کہ نواز شریف کے ڈرائیور نے 18 کروڑ روپے بھیجے، ہم منی لانڈرنگ کے تمام ثبوت نیب کو دیں گے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ خواجہ آصف اور نواز شریف جیسے لوگوں نے اسمبلی تباہ کی، دنیا میں کونسی اسمبلی عدالت میں جھوٹ بولنے اور قوم کو لوٹنے والے کو پارٹی کا سربراہ بنانے کے لیے قانون بناتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خواجہ آصف سے بڑا جھوٹا آدمی کوئی نہیں، خواجہ آصف دبئی میں کمپنی میں کام کررہے ہیں اور 16 لاکھ روپے تنخواہ ہے، ان کے اکاو¿نٹس سے پیسہ ان کی بیوی کے اکاو¿نٹس میں جاتاہے جب کہ جس آدمی کے باہر بینک اکاو¿نٹس ہیں اور دبئی میں ملازمت کرتا ہے، وہ پاکستان کی نمائندگی کیسے کرسکتا ہے، یہ پاکستان کے لیے سیکیورٹی رسک اور جمہوریت کے لیے دھبہ ہیں۔چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ نواز شریف نے 300 ارب روپے کا جواب دینا ہے جو اس ملک سے باہر گیا ہے، انہیں بے نقاب کرنے کے بجائے میر شکیل کا میڈیا جنگ جیو گروپ میرے پیچھے پڑے ہیں، جنگ جیو گروپ نقصان میں جارہے ہیں لیکن باہر یہ محل بنارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنگ جیو گروپ سب سے بڑے مجرم کو بچارہے ہیں جنہوں نے ہمارے ادارے تباہ کیے، ان کا کام ہے کہ تحقیقاتی صحافت کریں لیکن یہ لوگوں کی نجی زندگی پر بات کرتے ہیں اور بلیک میل کرتے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ نیب نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو طلب کرکے بڑا زبردست کام کیا ہے، چیرمین نیب کے ساتھ ساری قوم کھڑی ہے اور ساری نظریں نیب پر ہیں، چیرمین نیب کو کسی قسم کا دباو¿ نہیں لینا چاہیے۔ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ کو پارلیمنٹیرینز نے ہی تباہ کیا کیونکہ یہاں بیٹھے لوگ فراڈ کرنے والوں کو پارٹی قائد بنانے کے لیے اسمبلی سے قانون پاس کرارہے ہیں۔پارلیمنٹ کے لیے لعنت کا لفظ بہت ہلکا ہے، بنی گالہ میں اپنی رہائش گاہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ خواجہ آصف اور نواز شریف جیسے لوگوں نے پارلیمینٹ کی بے حرمتی کی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا وزیر خارجہ دبئی میں نوکری کررہا ہے اور ان کے بینک اکاونٹ سے پیسہ امریکا جارہا ہے، کیا وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو معلوم نہیں کہ خواجہ آصف بیرونِ ملک نوکری بھی کرتے ہیں۔۔ پارلیمنٹ کے حوالے سے دیئے گئے اپنے حالیہ بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ‘لعنت کا لفظ میں نے بہت ہلکا استعمال کیا، جو لفظ کہنا چاہتا تھا، وہ اس سے زیادہ سخت تھا۔’ ‘پارلیمنٹ ایک عمارت کا نام ہے، جس کی عزت کو پارلیمنٹیرینز اپنی حرکتوں سے اوپر یا نیچے لے جاتے ہیں’ ۔پی ٹی آئی چیئرمین نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ‘پارلیمنٹ میں چوروں کا مافیا بیٹھ گیا ہے، میں کیسے ایسی پارلیمنٹ کی عزت کروں جہاں مجرم بیٹھے ہوئے ہیں، یہ کیسی پارلیمنٹ ہے جس میں وزیراعظم نے کھڑے ہو کر جھوٹ بولے ،عمران خان نے کہا کہ پارلیمنٹ کو پا رلیمنٹیرینز نے ہی تباہ کیا کیونکہ یہاں بیٹھے لوگ فراڈ کرنے والوں کو پارٹی قائد بنانے کے لیے اسمبلی سے قانون پاس کرارہے ہیں۔ان کا کہنا تھا’آج وزیر خارجہ خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں بڑی دھواں دھار تقریر کی، دراصل خواجہ آصف اور نواز شریف جیسے لوگوں نے ہی اسمبلی تباہ کی ہے’۔عمران خان نے مزید کہا کہ ‘ملک کا وزیر خارجہ دبئی میں ایک کمپنی میں کام کر رہا ہے، جس کی 16 لاکھ روپے تنخواہ ہے اور ان کے بینک اکاونٹس سے امریکا پیسے جارہے ہیں جو ان کی بیوی کو ملتے ہیں’۔چیئرمین پی ٹی آئی نے خواجہ آصف کو ملک کے لیے سیکیورٹی رسک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ‘خواجہ آصف سے بڑا کوئی جھوٹا انسان ہوسکتا ہے؟’عمران خان نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا حوالہ دیتے ہوئے سوال کیا، ‘مجھے یہ بتائیں کہ کون سی ایسی اسمبلی ہے جو ایک 300 ارب چوری کرنے والے شخص کے لیے قانون بناکر اسے پارٹی کا سربراہ بناتی ہے’۔پی ٹی آئی چیئرمین نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ وہ آج ‘مجھے کیوں نکالا’ کی دوسری قسط پیش کر رہے ہیں۔انہوں نے دعوی کیا کہ 1992 کے بعد شریف خاندان کی دولت میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے، ساتھ ہی انہوں نے شریف برادران پر پنجاب پولیس کے اہلکاروں سے منی لانڈرنگ کروانے کا الزام بھی عائد کردیا۔پی ٹی آئی چیئرمین نے بتایا کہ ‘ملک سے باہر شریف خاندان کی 16 کمپنیاں ہیں، جن میں سے ایک ہل میٹل ہے’۔ان کا کہنا تھا کہ ہل میٹل 114کروڑ 68 لاکھ روپے نواز شریف کو بھیج چکی تھی، نواز شریف نے 80 کروڑ روپے مریم نواز کے نام کردیئے۔پی ٹی آئی چیئرمین نے مزید بتایا کہ ‘ہمیں نئی چیز پتہ چلی ہے کہ ہل میٹل کمپنی سے تقریبا 4 کروڑ روپے محمد حینف خان کو جا رہے تھے’۔عمران خان کا کہنا تھا کہ شریف خاندان نے اپنے ملازموں اور نوکروں کے ذریعے منی لانڈرنگ کی، یہ لوگ پنجاب پولیس کے کانسٹیبلز کے ذریعے منی لانڈرنگ کراتے رہے، انہوں نے جاتی امرا کے ڈرائیور پنوں سے 5 کروڑ ایک شخص کو بھجوائے جب کہ نواز شریف کے ڈرائیور نے 18 کروڑ روپے بھیجے، ہم منی لانڈرنگ کے تمام ثبوت نیب کو دیں گے۔چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ نواز شریف نے 300 ارب روپے کا جواب دینا ہے جو اس ملک سے باہر گیا ہے،۔عمران خان نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ، ‘دنیا کے کسی مہذب معاشرے میں اگر کوئی اس طرح سے پکڑا جائے تو وہ جیل میں ہو، لیکن یہ یہاں ‘کیوں نکالا، کیوں نکالا’ کر رہے ہیں’۔۔عمران خان نے وزیر خارجہ خواجہ آصف کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ خود پارلیمنٹ پر ایک دھبہ ہے، اور امریکا میں جاکر ڈونلڈ ٹرمپ کی زبان بولتے رہے۔گذشتہ روز مال روڈ پر پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کی زیرقیادت متحدہ اپوزیشن کے جلسے میں شرکا کی کم تعداد کے سوال پر عمران خان نے جواب دیا کہ ‘کل کے جلسے کا تعداد سے کوئی تعلق نہیں تھا، کل ساری سیاسی جماعتوں نے احتجاج کا اعلان کیا تھا’۔انہوں نے کہا، ‘کل احتجاج کا مقصد لوگوں کا ہجوم دکھانا نہیں تھا بلکہ کل کے احتجاج کا مقصد انسانیت کی خاطر تمام سیاسی جماعتوں کا متحد ہونا تھا’۔چیئرمین تحریک انصاف نے قومی احتساب بیورو (نیب)کی جانب سے وزیرِاعلی پنجاب شہباز شریف کو طلب کرنے پر ادارے کی کارکردگی کو سراہا اور چیئرمین نیب کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ یہ قوم لٹی ہوئی ہے، ترسی ہوئی ہے، یہ آپ ہی کی طرف دیکھ رہی ہے،اس سے قبل جمعرات کو چیئرمین پی ٹی آئی نے پریس کانفرنس کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ پارلیمنٹ قومی مفادات کا تحفظ کرنے کے بجائے کرپٹ افراد کیلئے قانون سازی کررہی ہے۔ٹوئٹر پیغام میں تحریک انصاف کے سربراہ کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ قومی مفادات کا تحفظ کرنے کے بجائے ایک ایسے شخص کے لئے قانون سازی کر رہی ہے، جس نے قوم کا تین ارب روپیہ لوٹا، جو ٹیکس چوری،دھوکا دہی، اثاثے چھپانے میں ملوث ہے۔چیئرمین تحریک انصاف کا مزید کہنا تھا کہ جن لوگوں کو لگتا ہے کہ میں پارلمینٹ پر لعنت بھیجی وہ غلط ہیں ، لعنت موجودہ پارلیمینٹ کے لئے بہٹ چھوٹا لفظ ہے،اگر کوئی مجھ سے اس معاملے پراختلاف کرتا ہے تو اسے چیلنج ہے کہ عوامی رائے لے لی جائے، مجھے یقین ہے عوام پارلیمنٹ کے حوالے سے میری جیسی رائے رکھتے ہیں۔واضح رہے کہ گزشتہ روز خورشید شاہ نے عمران خان کی جانب سے پارلیمنٹ کے بارے میں دیئے گئے ریمارکس کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ عمران خان نے نواز شریف کے موقف کی تائید کی ہے، حکومت کی ناکامی کو پارلیمنٹ کی ناکامی قرار نہیں دیا جا سکتا۔یاد رہے کہ گزشتہ روز لاہور میں پاکستان عوامی تحریک کے احتجاج کے دوران خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ شیخ رشید کی جانب سے قومی اسمبلی کی رکنیت سے استعفی کے اعلان پر میں شیخ رشید کی باتوں سے متفق ہوں، ایسی پارلیمنٹ پر لعنت بھیجتا ہوں جو مجرم کو اپنا سربراہ بنائے، شیخ رشید کا استعفے والا آئیڈیا اچھا ہے، اس بارے میں پارٹی سے مشاورت کروں گا اور ممکن ہے ہم جلد شیخ رشید کو جوائن کرلیں
شریف خاندان نے اپنے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خان
شریف خاندان نے اپنے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خانشیئرٹویٹ
ویب ڈیسک جمعرات 18 جنوری 2018
شیئر
ٹویٹ
تبصرے
مزید شیئر

’مجھے کیوں نکالا‘ کی ا?ج اس کی دوسری قسط پیش کررہا ہوں، چیرمین تحریک انصاف۔ فوٹو: فائل
’مجھے کیوں نکالا‘ کی ا?ج اس کی دوسری قسط پیش کررہا ہوں، چیرمین تحریک انصاف۔ فوٹو: فائل

Scroll To Top