2017؛ ون ڈے کرکٹ؛ حسن علی نے تمام بولرز کو پیچھے چھوڑ دیا

hبابر اعظم 4سنچریوں کے ساتھ روہت اور کوہلی کے بعد تیسرے نمبر پر رہے فوٹو: فائل

 لاہور: سال 2017 کی ون ڈے کرکٹ میں حسن علی نے تمام بولرز کو پیچھے چھوڑ دیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پیسر نے 45 شکار کیے انھوں نے سب سے زیادہ 3بار 5وکٹیں لینے کاکارنامہ بھی سرانجام دیا، بابر اعظم 4سنچریوں کے ساتھ روہت شرما اور ویرات کوہلی کے بعد  تیسرے نمبر پر رہے،ٹیسٹ کرکٹ میں ناتھن لیون60 وکٹوں، ویرات کوہلی اور اسٹیون اسمتھ 5،5 سنچریوں کے ساتھ نمایاں رہے۔

تفصیلات کے مطابق سال 2017 میں کھیلے جانے والے ون ڈے انٹرنیشنل میچز میں پاکستان کے حسن علی سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔ انھوں نے 18 مقابلوں میں 45 شکار کیے، حسن علی رواں سال 5ون ڈے میچز میں سب سے زیادہ بار 5وکٹیں لینے والے بولر بھی ہیں، انھوں نے یہ کارنامہ 3مرتبہ سرانجام دیا،سب سے زیادہ 6،6سنچریاں بھارت کے روہت شرما اور ویرات کوہلی نے بنائیں، تیسرے نمبر پر پاکستان کے بابر اعظم ہیں جنھوں نے 4تھری فیگر اننگز کھیلیں،بھارتی روہت شرما21 ون ڈے میچزمیں 46 اور ہم وطن ہردیک پانڈیا28 میں 30 چھکے لگانے میں کامیاب ہوئے۔ زمبابوے کے تینڈے چتارا 12 میچز میں پانچ اننگز کھیل کر 3 بار کھاتہ کھولنے سے محروم رہے۔

نیوزی لینڈ نے ویسٹ انڈیز کو 204 رنز سے شکست دے کر مارجن کے لحاظ سے سال کی سب سے بڑی فتح حاصل کی۔ نیوزی لینڈ کی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف کھیلے گئے میچ میں سب سے زیادہ 29 ایکسٹراز دے کر سرفہرست ہے۔ ٹیسٹ کرکٹ میں آسٹریلوی ناتھن لیون11میچزمیں 60 وکٹیں لے کر پہلے جبکہ بھارتی روی چندرن ایشون اتنے ہی مقابلوں میں 56شکار کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔ اننگز میں سب سے زیادہ بار5 وکٹیں لینے والے بولر یاسر شاہ نے 5 بار یہ کارنامہ سرانجام دیا۔

ویرات کوہلی اورآسٹریلوی کپتان اسٹیون اسمتھ نے سب سے زیادہ 5،5 سنچریاں بنائیں۔ ٹیسٹ کرکٹ میں سال 2017 میں نیوزی لینڈ کے ڈی گرینڈ ہوم نے 6میچز میں 15 چھکے لگائے۔ ان کے بعد سب سے زیادہ 13 چھکے بھارتی رویندرا جڈیجا نے لگائے۔ سب زیادہ صفر پر آؤٹ ہونے والوں میں سرفہرست سری لنکا کے نوان پردیپ 6 میچز کی 12 اننگز میں 7مرتبہ بغیر کھاتہ کھولے آؤٹ ہوئے،اس فہرست میں دوسرے نمبر پر آنے والے بیٹسمین بابراعظم ٹیسٹ میچزکی 12 اننگز میں 5 مرتبہ صفر پر آؤٹ ہوئے۔ ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے بڑی فتح جنوبی افریقہ کے نام رہی جس نے انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ میچ 340 رنز سے جیتا۔ ٹیسٹ کرکٹ میچ کی اننگز میں سب سے زیادہ ایکسٹراز دینے والی ٹیموں میں سب سے پہلا نمبر پاکستان کا رہا جس نے ویسٹ انڈیز کیخلاف ٹیسٹ میچ کی ایک اننگز میں 44 فاضل رنز دیے۔

Scroll To Top