بادام اور اخروٹ کا استعمال ذیابطیس سے بچاؤمیں مددگار

eخوراک میں معمولی سی تبدیلی دنیا بھرمیں تیزی سے پھیلنے والی بیماری ذیابطیس کی ٹائپ ٹو سے بچاؤ میں مددگار ثابت ہوسکتی ہے، فوٹو:فائل

سڈنی: نئی تحقیق کے مطابق بادام اور اخروٹ کا استعمال ذیابطیس کے خطرے کو کم کردیتا ہے۔

آسٹریلیا کے جارج انسٹی ٹیوٹ فار گلوبل ہیلتھ کے ڈاکٹر جیسن وو کے مطابق 10 مختلف ممالک کے 39,740 بالغ افراد کی تجزیاتی رپوٹ سے حاصل ہونے والے  اعداد وشمار کےمطابق لیبارٹری ٹیسٹ نے ثابت کیا کہ وہ افراد جن کے خون میں Linoleic acid  اور Arachidonic Acid جو کہ اومیگا 6 فیٹ کا اہم جز ہے پایا گیا ان لوگوں میں ذیابطیس کی ٹائپ ٹو کے پیدا ہونے کا خطرہ دیگر لوگوں کے مقابلے میں 35 فیصد کم پایا گیا۔

ڈاکٹر جیسن وو کاکہنا ہے کہ اپنی خوراک میں معمولی سی تبدیلی دنیا بھرمیں تیزی سے پھیلنے والی بیماری ذیابطیس کی ٹائپ ٹو سے بچاؤ میں مددگار ثابت ہوسکتی ہے۔

ڈاکٹر جیسن کامزیدکہنا تھا کہ Linoleic acid انسانی جسم میں نہیں پایا جاتا اس کو حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ صرف خوراک میں سویابین سن فلاور آئل، بادام، کاجو اور اخروٹ کا استعمال ہے جس کو خوراک کا حصہ بنانے سے  ذیابطیس کے ٹائپ ٹو سے بچاؤ ممکن ہے۔

Scroll To Top