ٹرمپ جنسی حملے کے الزامات کے باعث ہلیری سے 7 پوائنٹ پیچھے

Hilary 7 Pointsforward After Trump Sexual Assault Charges

ماڈل، فوٹوگرافر اور اب سابق اپرنٹس، ڈونلڈ ٹرمپ پر نازیبا حرکات کے الزامات کا سلسلہ تھم نہ سکا، ایک کے

بعد ایک جنسی حملے کے الزامات نے ڈونلڈ ٹرمپ کو ووٹرریٹنگ میں ہلیری کلنٹن سے سات پوائنٹ پیچھے دھکیل دیا ۔

امریکی اخبار کو انٹرویو میں اپرنٹس ’سمر زیروس‘نے بتایا کہ جب ماضی میں وہ کیریئرکےلیے جدوجہد کررہی تھیں توڈونلڈ ٹرمپ نے ان پر جنسی حملہ کیا تھا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نےخاتون کے الزام کا جواب دینے کےبجائے ڈھٹائی دکھاتےہوئے کہا کہ الزام لگانےوالی خاتون ان کے قابل ہی نہیں۔

یہی نہیں دو مزید خواتین کرسٹن اینڈرسن اور جیسیکا لیڈز بھی ٹرمپ کے جنسی حملوں کے خلاف میڈیا کے سامنے آگئی ہیں ۔

ڈونلڈٹرمپ نے جنسی حملے کے الزامات کا ذمہ دار میڈیا کو قراردیتے ہوئے کہا کہ حماقتوں کا تھیٹرلگاکر امریکی شہریوں کے ذہنوں میں زہر گھولاجارہا ہے۔

لیکن پے درپے الزامات سے گھبرائے ٹرمپ یہ بھول گئے کہ کچھ ہی دن پہلے کلنٹن کے خلاف جنسی الزامات سے بھری پریس کانفرنس خود موصوف نے کی تھی۔

عام خواتین ہی نہیں ڈیموکریٹ امیدوار ہلیری کلنٹن بھی ٹرمپ سے خوفزدہ نکلیں،ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ مباحثے کے دوران ایسا لگا کہ ڈونلڈ ٹرمپ ان کا پیچھا کررہے ہیں۔

دوسری جانب صدر باراک اوباما نے ڈونلڈ ٹرمپ کے انداز کو ایک روتے ہوئے بچے کا طرز عمل قرار دیا ہے

Scroll To Top