ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ؛ پاکستان نے پہلی اننگز 579 رنز پر ڈیکلئر کردی

دبئی: پاکستان نے تاریخی ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ میں 3 کھلاڑیوں کے نقصان پر 579 رنز بنا کر پہلی اننگز ڈیکلیئر کردی جب کہ ویسٹ انڈیز نے دوسرے دن کے اختتام پر ایک وکٹ کے نقصان پر 69 رنز بنا لیے۔

دبئی انٹرنیشنل گراؤنڈ میں کھیلے جانے والے تاریخی ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے اظہر علی کی شاندار ٹرپل سنچری کی بدولت 3 وکٹوں کے نقصان پر 579 رنز بنانے کے بعد اپنی اننگز ڈیکلئر کردی جب کہ ویسٹ انڈیز کی پہلی اننگز میں بیٹنگ جاری ہے اور دوسرے دن کے اختتام پر اس نے ایک وکٹ کے نقصان پر 69 رنز بنالیے۔

دوسرے روز قومی ٹیم نے 279 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ پر اپنی نامکمل اننگز کا آغاز کیا، اس دوران اسد شفیق نے اپنی نصف سنچری مکمل کی اور وہ 67 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے تاہم اظہر علی وکٹ پر ڈٹے رہے اور انہوں نے پہلے ڈبل سنچری مکمل کی اس دوران بابر اعظم 69 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے تاہم اظہر علی نے اپنے کیرئر کی پہلی ٹرپل سنچری بھی مکمل کی اور پاکستان کی جانب سے ٹرپل سنچری بنانے والے چوتھے ٹیسٹ کرکٹر ہونے کا اعزاز اپنے نام کیا جب کہ انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ میں 4 ہزار رنز بھی مکمل کرلیے یوں وہ پاکستان کی جانب سے 4 ہزار رنز بنانے والے 10ویں پاکستانی بن گئے ہیں۔

اس سے قبل میچ کا ٹاس پاکستانی کپتان مصباح الحق نے جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا جس کے بعد اوپننگ بلے باز اظہرعلی اور سمیع اسلم نے پراعتماد انداز سے کھیلتے ہوئے ٹیم کو 215 رنز کا شاندار آغاز فراہم کیا جب کہ پہلے دن کھیل کے اختتام تک پاکستانی ٹیم نے ایک وکٹ کے نقصان پر 279 رنز بنالیے تھے، سمیع اسلم 90 رنز بنا کرآؤٹ ہوئے۔

دوسری جانب لیگ اسپنر یاسر شاہ اب تک 16 میچز میں 95 وکٹیں حاصل کرچکے ہیں اور اگر وہ اس ٹیسٹ میں 5 وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو کم ٹیسٹ میچز میں وکٹوں کی سنچری بنانے والے پہلے بولر بننے کا اعزاز حاصل کرلیں گے۔

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی ٹیمیں کرکٹ کی تاریخ میں دوسرا ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ کھیلنے کا اعزاز حاصل کررہی ہیں۔ اس سے قبل کرکٹ کی تاریخ کا پہلا ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ گزشتہ سال نومبر میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلا گیا تھا۔

واضح رہے پاکستان نے ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے انٹرنیشنل میچ میں ویسٹ انڈیز کو کلین سوئپ کیا تھا۔

Scroll To Top