شریف فیملی کیخلاف نیب ریفرنسز کی تیاری شروع: چیف جسٹس نے جسٹس اعجاز الاحسن کو نگران جج مقرر کر دیا

  • جسٹس اعجاز الاحسن کی عدم موجودگی میں جسٹس اعجاز افضل خان ریفرنسز کی نگرانی کریں گے، جسٹس اعجاز الاحسن پاناما کیس کی سماعت کرنے والے 3 رکنی عملدرآمد بینچ کا حصہ رہے ہیں
  • یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے پاناما کیس کے فیصلے میں شریف خاندان کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنسز دائر کرنے کا حکم دے رکھا ہے جو عدالتی فیصلے کے 6 ہفتے کے اندر دائر کیے جائیں گے

شریف فیملی کیخلاف نیب ریفرنسز کی تیاری شروع: چیف جسٹس نے جسٹس اعجاز الاحسن کو نگران جج مقرر کر دیااسلام آباد (این این آئی)سپریم کورٹ نے جسٹس اعجاز الاحسن کو شریف خاندان کے خلاف ریفرنسز کا نگراں جج مقرر کردیا۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے پاناما کیس کے فیصلے میں شریف خاندان کے خلاف احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کرنے کا حکم دے رکھا ہے جو عدالتی فیصلے کے 6 ہفتے کے اندر جاری کیے جائیں گے۔عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ ریفرنسز کے معاملات کی نگرانی کے لیے ایک جج مقرر کیا جائے گا۔ نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ نے شریف خاندان کے خلاف ریفرنسز کے معاملے پر جسٹس اعجاز الاحسن کو نگراں جج مقرر کردیا ہے۔ذرائع کے مطابق جسٹس اعجاز الاحسن کی عدم موجودگی پر جسٹس اعجاز افضل خان ریفرنسز کی نگرانی کے معاملات کو دیکھیں گے۔واضح رہے کہ جسٹس اعجاز الاحسن پاناما کیس کی سماعت کرنے والے 3 رکنی عملدرآمد بینچ کا حصہ رہے ہیں۔گزشتہ دنوں چیئرمین نیب کی زیرصدارت نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں شریف خاندان سمیت اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنسز دائر کرنے کا فیصلہ کیا گیا جو راولپنڈی اور اسلام آباد کی احتساب عدالتوں میں دائر کیے جائیں گے۔

Scroll To Top