نو منتخب وزیراعظم کے عدلیہ پر شدید حملے: ایوان صدر میں تقریب حلف برداری

  • نواز شریف نے کبھی کرپشن نہیں کی ،وہ ایک بار پھر وزیر اعظم بنیں گے اور اس کرسی پر واپس آئیں گے،اس عدالت (سپریم کورٹ)سے بڑی ایک اورعدالت (عوام)لگے گی جس میں کوئی جے آئی ٹی نہیں ہوگی، شاہد خاقان عباسی کا نااہل وزیر اعظم کو شاندار خراج تحسین
  • وزیر اعظم کے انتخاب کے لئے ووٹنگ کے دوران مسلم لیگی رہنما نااہل وزیر اعظم نواز شریف کے پورٹریٹس کے ہمراہ نعرے بازی میں مصروف رہے، سپیکر قومی اسمبلی غیر جانبدارانہ کردار ادا کرنے میں بری طرح ناکام، اپوزیشن کی شدید تنقید
اسلا م آباد، صدر ممنون حسین نو منتخب وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے ان کے عہدے کا حلف لے رہے ہیں

اسلا م آباد، صدر ممنون حسین نو منتخب وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے ان کے عہدے کا حلف لے رہے ہیں

اسلام آباد (مانیٹرنگ+آن لائن ) نومنتخب وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ نواز شریف نے کبھی کرپشن نہیں کی اور وہ ایک بار پھر وزیر اعظم بنیں گے سپریم کورٹ کے فیصلے کومن وعن قبول کیا تاہم پاکستان کی عوام نے سپریم کورٹ کے فیصلے کوقبول نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد نوازشریف نے عہدہ چھوڑ دیا لیکن پارٹی میں کوئی درارڑ نہیں پڑی اور کوئی ایم این اے کہیں نہیں گیا۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نوازشریف نے جس کا نام لیا وہ آج آپ کے سامنے ہے کیوں کہ وزیراعظم کی کرسی کو میراث سمجھتی ہے مسلم لیگ (ن) کی کامیابی ہے یہ کرسی آج بھی ہمارے پاس ہے۔انہوں نے نواز شریف کو عوام کا وزیراعظم قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم لوگ گواہ ہیں کہ نوازشریف پرکوئی کرپشن کا چارج نہیں ہے اور اپوزیشن بھی گواہی دے گی کہ نوازشریف نے کرپشن نہیں کی نو منتخب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ 30 سال سے نوازشریف کے ساتھ ہوں اور کبھی انہوں نے کرپشن کے لیے نہیں کہا اور نوازشریف نے ملک کوایٹمی طاقت بنایا اس لیے وہ قصور وار ہیں۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نوازشریف نے ملک کو ترقی کے راستے پر گامزن کیا اور معیشت کومستحکم کیا اور ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی یہی نہیں بلکہ نوازشریف نے 10 ہزار میگا واٹ بجلی سسٹم میں شامل کی نواز شریف کا قصور یہ ہے کہ 60 ارب ڈالر کی انویسٹمنٹ لیکر آیا۔ ملک میں موٹر ویز کا جال بچھ رہا ہے۔ مشرف 8 سال حکومت میں رہا، کوئی ایک موٹر وے اور ڈیم نہ بنا سکا۔ یہ وہ لوگ تھے جو اپنی جیبیں بھرنا جانتے تھے۔پوری امید ہے کہ نواز شریف اس کرسی پر واپس آئیں گے۔۔نومنتخب وزیراعظم کاکہناتھاکہ ہم نے سپریم کورٹ کے فیصلے کوقبول کیا،فیصلے کے بعدہماری پارٹی میں کوئی دراڑنہیں پڑی۔ ان کاکہناتھاکہ اس عدالت سے بڑی ایک اورعدالت لگے گی۔ اس عدالت میں کوئی جے آئی ٹی نہیں ہوگی۔۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نواز شریف نے عوام کی خدمت کی جس کی گواہی عوام دیں گے اور سابق وزیراعظم کا قصور یہ تھا کہ 10 ہزار میگاواٹ بجلی سسٹم میں لائے، ہم گواہ ہوں گے کہ نواز شریف نے کبھی کرپشن نہیں کی، اس عدالت سے بڑی عدالت لگے گی جہاں کوئی جے آئی ٹی نہیں ہوگی اور وہاں گواہی دیں گے کہ نواز شریف پر کوئی کرپشن چارج نہیں ہے نومنتخب وزیراعظم نے کہا کہ آج اس ایوان کا سب سے بڑا کام یہ ہے ایوان اپنی عزت و تقدس کو بحال کرے، ہمیں آئین کے مطابق چلنا ہے، حکومت، اپوزیشن، فوج اور عدلیہ سب ایک کشتی میں سوار ہیں، اگر کشتی میں چھید ہوگا توسب ڈوب جائیں گے۔۔۔۔منگل کے روز نو منتخب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اپنے عہدے کا حلف اٹھایا حلف برداری کی پروقار تقریب ایوان صدر میں منعقد ہوئی، تقریب میں ارکان پارلیمنٹ، مسلح افواج کے سربراہاں، چاروں صوبوں کے وزیراعلیٰ اور گورنر سمیت مختلف ملکوں کے سفارتکاروں نے بھی شرکت کی، صدر مملکت ممنون حسین نے شاہد خاقان عباسی سے وزیراعظم کے عہدے کا حلف لیا، اپنے عہدے کا حلف اٹھانے کے بعد شاہد خاقان عباسی پاکستان کے 28ویں وزیراعظم کا اعزاز حاصل کیا۔ دریں اثناءعبوری وزیر اعظم کے خطاب پر تبصرہ کرتے ہوئے ممتاز ماہر قانون انور منصور کا کہنا ہے کہ ان کا خطاب عدلیہ پر تابڑ توڑ حملوں سے بھرپور تھا جس پر سپریم کورٹ کو ازخود نوٹس لے کر توہین عدالت کی کارروائی کرنا ہو گی انہوں نے کہا کہ خاقان عباسی نے مقدس ایوان کو عوام کی فلاح و بہبود کے برعکس اعلیٰ عدلیہ پر اور دیگر اداروں پر انگلیاں اٹھانے کے لئے استعمال کیا جو کہ درست نہیں۔

Scroll To Top