گو نواز گو، اب یہ نعرہ نہیں تحریک ہے، عمران خان کا اعلان

  • جس شخص نے کہا کہ نواز شریف دوستی کرنا چاہتا ہے لیکن فوج نہیں مانتی، وہ نواز شریف کا قریبی دوست ہے، سربراہ پی ٹی آئی
    عمران خان ڈٹ گئے، جلسہ عام میں اعلان کیا کہ 10 ارب روپے کی پیش کش کرنے والے شخص کا نام عدالت میں بتائیں گے اور اس کے تحفظ کیلئے درخواست بھی کریں گے
  • حکومت کیخلاف تحریک کے آغاز کا اعلان، شہر شہرجانے اور حکومت کاسوشل بائیکاٹ کرنے کا مطالبہ کریں گے،کسی ملک میں ایسا نہیں ہوتا کہ کوئی اپنی ہی فوج کے خلاف باتیں کرے لیکن مسلم لیگ نواز ایسا کررہی ہے، چیئرمین پی ٹی آئی
اسلام آباد، چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان ایک بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد، چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان ایک بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ 10 ارب روپے کی پیش کش کرنے والے شخص کا نام وہ عدالت میں بتائیں گے اور اس پاکستانی تاجر کے تحفظ کیلئے عدالت سے درخواست بھی کریں گے۔پی ٹی آئی چیئرمین نے اسلام آباد میں پارٹی کے عوامی جلسے سے خطاب کے دوران کہا کہ میں نے سنا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے میرے دعوے کے خلاف اربوں روپے ہرجانہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میں 10 ارب روپے کی پیش کش کے دعوے پر اب بھی قائم ہوں۔انھوں نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کو مافیا قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں اس شخص کا نام عدالت میں پیشکروں گا اور اس کے تحفظ کیلئے عدالت سے درخواست بھی کروں گا تاکہ آپ اس کے خلاف جھوٹے مقدمے قائم کرکے اس کا کاروبار تباہ نہ کرسکیں۔ عمران خان نے اعلان کیا کہ وہ حکومت کیخلاف تحریک کا آغاز کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ وہ گھر نہیں بیٹھیں گے، شہر شہر جائیں گے اور لوگوں سے حکومت کے سوشل بائیکاٹ کا مطالبہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ جمعہ کو نوشہرہ اور سات مئی کو سیالکوٹ آرہا ہوں۔، جسٹس سجاد علی شاہ نے ٹی وی پر آ کر کہا کہ شہباز شریف اور رفیق تارڑ نے کوئٹہ کے ججز کو بریف کیس دیئے۔ عمران خان نے چیلنج کیا کہ دونوں بھائی قرآن شریف پر ہاتھ رکھ کر کہو کہ تم نے کبھی رشوت نہیں دی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ شریف برادران کے بچوں سے کہوں گا کہ مجھے پیسے ادھار دے دو ہرجانہ ادا کرنا ہے عمران خان کا کہنا تھا کہ میں عدالت کے سامنے دبئی میں بیٹھے اس شخص کا نام بھی بتاو¿ں گا جس نے مجھے رقم کی پیش کش تھی، جس کے بعد شریف خاندان کے مزید لوگ اس معاملے میں پھنس جائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ 10 ارب کی آفر لانے والے کو بھی 2 ارب دینے کی پیشکش کی گئی تھی۔وزیراعظم نواز شریف اور بھارتی تاجر سجن جندال کے درمیان ملاقات پر اٹھنے والے حالیہ تنازع کے حوالے سے عمران خان نے کہا کہ ‘بھارتی تاجر کا کہنا تھا کہ نواز شریف تو بھارت سے دوستی کرنا چاہتے ہیں لیکن پاکستان آرمی انھیں ایسا کرنے نہیں دیتی’۔انھوں نے کہا کہ کسی ملک میں ایسا نہیں ہوتا کہ کوئی اپنی ہی فوج کے خلاف باتیں کرے لیکن مسلم لیگ نواز ایسا کررہی ہے۔عمران خان نے پاناما لیکس کیس کے فیصلے کی نشاندہی کرتے ہوئے کہا کہ 2 ججز کے مطابق نوازشریف صادق اور امین نہیں رہے جبکہ 3 ججز نے نوازشریف کوجھوٹا کہا اور جے آئی ٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی عمران خان نے جلسے کے دوران خواجہ آصف کی پاناما لیکس سے متعلق اسمبلی کی تقریر سمیت دیگر آڈیوز بھی سنوائیں۔بھارت کی پاکستان میں مداخلت کے واقعات اور کلبھوشن یادیو کی گرفتاری پر عمران خان نے کہا کہ بھارت کی خفیہ ایجنسی ‘را’ بلوچستان میں تخریب کاری کررہی ہے، لیکن حکمرانوں میں نریندرا مودی کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کی جرا¿ت نہیں۔بھارت کے زیر انتظام کشمیر کے موجودہ حالات کے حوالے سے عمران خان نے کہا کہ 25 سال سے بھارتی فوج کشمیریوں پر ظلم ڈھا رہی ہے، اس موقع پر عمران خان نے بھارتی مظالم کا مقابلہ کرنے پر کشمیریوں کو خراج تحسین پیش کیا۔انھوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ جہاں موقع ملے گا کشمیر کی بات کروں گا، ‘کشمیریوں کے لیے پی ٹی آئی ہرفورم پر بات کرے گی’۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک میں سالانہ 10 ارب ڈالرز کی منی لانڈرنگ ہوتی ہے،جب ڈالرز کم ہو جاتے ہیں تو پھر اور قرض لینے پڑتے ہیں،نتیجہ مہنگائی کی صورت میں نکلتا ہے،خمیازہ عوام کو بھگتنا پڑتا ہے،یہ قوم غریب و مقروض ہورہی ہے، کرپشن کی وجہ سے سرمایہ کاری نہیں ہوتی، جس کی وجہ سے نوجوانوں کو نوکریاں نہیں ملتی، ایک طرف ہم چوری اور کرپشن پر قابو پاکر ملک کی تقدیر بدل سکتےہیں، پختونوں خوا میں کرپشن کم ہے،چارسال میں آج تک کوئی پرچی نہیں لگائی، میں کرپشن نہیں کرتا توباقیوں کے لیے بھی مشکل ہوجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ 4سال سےہماری حکومت ہے،آج تک نہ میں نے کوئی پرچی لگائی نہ دوستوں،رشتے داروں نے،جس دن کرپشن پرقابوپالیا،ادارے مضبوط ہوں گے، ملک میں خوشحالی آئے گی،پرویزخٹک چین میں 23 ارب کی پختونخوا میں سرمایہ کاری کے ایم اویوزپردستخط کرکے آئے ہیں،پختونخوا میں کرپشن کم ہے،چارسال میں آج تک کوئی پرچی نہیں لگائی،چین نے ایسے ترقی نہیں کی،چین نے 3سال میں کرپشن کے الزام میں 200 وزیروں ،11 لاکھ سرکاری ملازمین کوپکڑا،4سال ہوگئے،بتائیں کیا میں نے اپنی کوئی فیکٹری لگائی؟نوازشریف نے یوسف رضا گیلانی کوکہا تھا کیس چل رہا ہے گھرجاﺅ ، نواز شریف اب آپ پرکیس چل رہا،آپ گھرجاﺅ۔انھوں نے قیام پاکستان کے حوالے سے کہا کہ علامہ اقبال کے خواب اور قائداعظم کی لیڈر شپ سے پاکستان بنا۔اس موقع پر انہوں نے عوام سے نواز شریف کے سوشل بائیکاٹ کا مطالبہ کیا اور کراچی، نوشہرہ اور سیالکوٹ سمیت دیگر شہروں میں جلسے کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ30 اپریل کو کراچی 5 مئی کو نوشہرہ اور 7 مئی کو سیالکوٹ میں جلسہ کروں گا

Scroll To Top