جے آئی ٹی کو شفاف بنانے میں کور کمانڈرز اپنا کردار ادا کرینگے، کمانڈرز کانفرنس

  • آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی سربراہی میں202ویں کور کمانڈر کانفرنس میں اعلیٰ ترین عسکری قیادت نے ملک میں جاری آپریشن ردالفساد کا جائزہ لیا
    کانفرنس میں پاناما کیس فیصلہ بھی تفصیلی طور پر زیر غور آیا ، طے پایا کہ کیس کی جے آئی ٹی میں شامل پاک فوج کے نمائندے قانونی اورشفاف کارروائی میں اپنا کردار ادا کریں گے
  • یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے پاناماکیس کی تحقیقات کےلئے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دیا ہے جس میں نیب، ایس ای سی پی اور ایف بی آر کے علاوہ آئی ایس آئی اور ایم آئی کے افسر ان بھی شامل ہوں گے
- File Photo

– File Photo

راو لپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی قیادت میں ہونے والی کور کمانڈرز کانفرنس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پاناما کیس کی جے آئی ٹی میں شامل پاک فوج کے نمائندے قانونی اورشفاف کارروائی میں اپنا کردار ادا کریں گے۔ ترجمان پاک فوج کی جانب سے جاری بیان کے مطابق جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی سربراہی میں 202ویں کور کمانڈرز کانفرنس ہوئی، کانفرنس میں اعلیٰ ترین عسکری قیادت نے ملک میں جاری آپریشن رد الفساد کا جائزہ لیا۔کور کمانڈرز کانفرنس میں سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ بھی تفصیلی طور پر زیر غور آیا اور فیصلہ کیا گیا کہ پاک فوج پاناما کیس کے فیصلے کے تناظر میں تشکیل دی جانے والی جے آئی ٹی میں شفاف کردار ادا کرے گی اور جے آئی ٹی میں شامل ادارے کے نمائندے سپریم کورٹ کے اعتماد پر پورا اتریں گے۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے پاناماکیس کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا حکم دیا ہے جس میں نیب، ایس ای سی پی اور ایف بی آر کے علاوہ آئی ایس آئی اور ایم آئی کے افسر بھی شامل ہوں گے۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پاناما کیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں شامل پاک فوج کے ارکان اپنا قانونی کردار شفاف طریقے سے ادا کریں گے اور سپریم کورٹ کے اعتماد پر پورا اتریں گے۔ کور کمانڈر کانفرنس میں آپریشن رد الفساد کا بھی جائزہ لیا گیا اور پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا گیا۔ –

Scroll To Top