سعودی عرب میں منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں 3 پاکستانیوں کے سر قلم

www

ریاض: سعودی حکام نے منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں 3 پاکستانی شہریوں کے سر قلم کردیئے۔
سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی کے مطابق پاکستان کے 3 شہریوں پر ہیروئن کی اسمگلنگ کا جرم ثابت ہونے پر ان کے سر قلم کردیئے گئے جس کے بعد رواں سال سرقلم کرنے کی سزا پانے والوں کی تعداد 26 ہوگئی۔ حکام کے مطابق جن پاکستانیوں کے سرقلم کئے گئے ان میں محمد اشرف ولد شفیع محمد، محمد عارف ولد محمد عنایت اور محمد افضل ولد اصغرعلی شامل ہیں۔
اس خبر کو بھی پڑھیں: سعودی عرب میں منشیات اسمگلنگ کیس میں پاکستانی شہری کا سر قلم
واضح رہے کہ سعودی عرب میں قتل، منشیات کی اسمگلنگ، مسلح ڈکیتی، زیادتی اور مرتد ہونے کی سزا سرقلم کرنا ہے جب کہ گزشتہ 20 سالوں کے دوران 2015 میں سب سے زیادہ 158 افراد کے سر قلم کئے گئے۔

Scroll To Top