پی آئی اے نجکاری بل3 ہفتوں کیلئے ملتوی ، اتفاق رائے پیدا کرنے کیلئے 10 رکنی کمیٹی قائم

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے پی آئی اے کی نجکاری کا بل تین ہفتوں کیلئے ملتوی کرتے ہوئے بل پر اتفاق رائے پیدا کرنے کیلئے 10 رکنی کمیٹی قائم کردی ہے۔
تفصیلات کے مطابق اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس کے بعد ایک کمیٹی قائم کی گئی جسے حکومت سے مذاکرات کرنے کا ٹاسک دیا گیا۔ اپوزیشن کی مذاکراتی کمیٹی نے حکومتی کمیٹی سے مذاکرات کیے جس میں حکومتی کمیٹی پی آئی اے کی نجکاری کے حوالے سے اپوزیشن ارکان کو منانے میں ناکام رہے ۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔

اپوزیشن سے مذاکرات کی ناکامی کے بعد حکومت نے پی آئی اے کی نجکاری کا بل 3 ہفتے کیلئے موخر کرتے ہوئے 10 رکنی کمیٹی قائم کردی ہے جس میں 3 سینیٹرز اور 7 ارکان قومی اسمبلی ہوں گے۔ کمیٹی تین ہفتے تک پی آئی اے کی نجکاری کے بل پر اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کرے گی۔
روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔
اپوزیشن کی مذاکراتی کمیٹی کے رکن پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی اسد عمر نے حکومت سے مذاکرات کے بعد بننے والی کمیٹی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ہماری بات مان لی اورپی آئی اے بل کا معاملہ تین ہفتوں کیلئے ملتوی کردیا گیا ہے ،چیئرمین نجکاری کمیشن پی آئی اے کی نجکاری کا بل 3 ہفتوں کیلئے ملتوی کرنے پر رضامند ہوگئے ہیں۔
واضح رہے کہ پی آئی اے کی نجکاری کیلئے منگل کو پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلایا گیا تھا ۔ اجلاس کے ایجنڈے میں پی آئی اے کی نجکاری کے بل کو پہلے نمبر پر شامل کیا گیا تھا۔

Scroll To Top