وزیراعظم، سیکیورٹی معاملات کا جائزہ لینے کیلئے وفد ہندوستان بھیجنے کا حکم

PM for sending cricket team to India after security clearance

اسلام آباد: ٰٰچچنواز شریف نے ہندوستان میں ہونے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں شرکت کیلئے پاکستانی ٹیم بھیجنے سے قبل سیکیورٹی معاملات کا جائزہ لینے کیلئے وفد ہندوستان بھیجنے کا حکم دیا ہے۔

وزیر اعظم ہاؤس سے جاری بیان کے مطابق ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں شرکت کیلئے پاکستانی ٹیم بھیجنے یا نہ بھیجنے کا فیصلہ سیکیورٹی ٹیم کی جانب سے جمع کرائی جانے والی رپورٹ کی روشنی میں کیا جائے گا۔

وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے وزیر اعظم ہاؤس میں ہونے والی ملاقات میں نواز شریف نے وزیر داخلہ ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ دہلی میں پاکستان ہائی کمیشن کی مدد سے پاکستانی ٹیم کیلئے فول پروف سیکیورٹی یقینی بنانے کیلئے اقدامات کریں۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم کا یہ حکم ریاست ہماچل پردیش کے وزیر اعلیٰ کے بیان کے بعد سامنے آیا ہے جنہوں نے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان اور ہندوستان کے درمیان میچ میں پاکستانی ٹیم کو سیکیورٹی فراہم کرنے سے معذرت کر لی تھی۔

دونوں روایتی حریفوں کو شیڈول کے مطابق 19 مارچ کو دھرم شالا میں مدمقابل آنا ہے۔

وزیر اعلیٰ ہماچل پردیش ویربہادرا سنگھ نے اتوار کو اپنے بیان میں کہا تھا کہ ہم میچ میں سیکورٹی دینے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

انہوں نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ میچ کے مقام کو ہندوستانی ایئر بیس پر عسکریت پسندوں کے حملوں میں ہلاک ہونے والوں کےاحترام میں تبدیل کردینا چاہیے۔

وزیر اعلیٰ ہماچل پردیش کے اس بیان وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے بھی تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

چوہدری نثار کا ایک بیان میں کہنا تھا ‘پاکستانی کرکٹ ٹیم کو فول پروف سیکیورٹی کی فراہمی کی یقین دہانی پر ہندوستان دورے کی اجازت دی جاسکتی ہے’۔

جمعے کو جاری بیان میں مزید کہا گیا کہ ویزر اعظم نے قومی ٹیم کی ایشیا کپ میں اوسط درجے کارکردگی پر پاکستان کرکٹ بورڈ سے رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔

Scroll To Top