کرونا وائرس کیخلاف لڑنے والے مسیحا بھی لپیٹ میں آ گئے

نشتر ہسپتال میںمریض کے انتقال کر بعد کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی انتظامیہ نے عملے کا کرونا ٹیسٹ کروایا جس کے نتیجے میں ڈاکٹر اور پیرامیڈیکل سٹاف کے 18 افراد کے ٹیسٹ مثبت آئے

کراچی، ملتان( مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا کے خلاف فرنٹ لائن پر جنگ لڑنے والے ڈاکٹرز سمیت طبی عملے کے 25 سے زائد افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ذرائع محکمہ صحت کے مطابق کراچی کے مختلف سرکاری اور نجی اسپتالوں میں ڈاکٹرز سمیت پیرا میڈیکل اسٹاف کے 20 سے زائد افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔متاثرہ افراد میں قومی ادارہ برائے صحت اطفال کے دو ڈاکٹر اور دو پیرا میڈیکل اسٹاف کے ممبران، سول اسپتال کے چار ملازم بشمول ڈاکٹر، عباسی شہید کے دو ڈاکٹرز اور لیاقت نیشنل اسپتال کے شعبہ ریڈیولوجی کے ایک ڈاکٹر شامل ہیں۔ان کے علاوہ شہید بینظیر ٹراما سینٹر کے ڈاکٹر اور عملے سمیت 13 افراد جب کہ ڈا یونیورسٹی کے اوجھا کیمپس میں ڈاکٹر سمیت 8 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ذرائع محکمہ صحت کا بتانا ہے کہ وائرس میں مبتلا ہونے والے ڈاکٹرز اور طبی عملے کو آئسولیشن میں رہنے کی ہدایت جاری کر دی گئی ہے۔ نشتر ہسپتال کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف سمیت 18 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا نے طبی عملے میں کورونا وائرس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ 12 ڈاکٹرز اور 6 پیرا میڈکس میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا نے بتایا کہ نشتر ہسپتال کے عملے نے گردوں کے ایک مریض کا علاج کیا تھا، مریض کے انتقال پر اس میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد وارڈ کے تمام متعلقہ افراد کا کورونا ٹیسٹ کرایا گیا جن میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی نے بتایا کہ جن افراد کا کورونا کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے ان تمام لوگوں نے آئسولیشن اختیار کر لی ہے۔

You might also like More from author