افغانستان کااسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار

افغانستان اور پاکستان کے درمیان مجرموں اور جرائم پیشہ افراد کے تبادلے کا معاہدہ موجود نہیں ہے

اسلام آباد (این این آئی)افغانستان نے دہشت گرد اور آئی ایس آئی آیس خراسان کے سربراہ اسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق افغان وزارت خارجہ نے دہشت گرد عبداللہ اورکزئی عرف اسلم فاروقی کے حوالے سے بیان جاری کر دیا جس کے مطابق افغانستان نے دہشت گرد اور آئی ایس آئی آیس خراسان کے سربراہ اسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا۔ افغان وزارت خارجہ کے مطابق پاکستانی حکومت نے افغانستان سے اسلم فاروقی کی حوالگی کا مطالبہ کیا تھا۔افغان وزارت خارجہ کے مطابق اسلم فاروقی داعش کا سربراہ ہے جو افغانستان میں بہت سے جرائم میں ملوث ہے۔افغان وزارت خارجہ نے کہاکہ اسلم فاروقی پر بہت سے حملوں کا الزام ہے جس میں بہت سے افغان شہری اور فوجی جاں بحق ہوئے۔ انہوںنے کہاکہ اسلم فاروقی کے ساتھ افغانستان کے قوانین کے تحت سلوک کیا جائیے گا،افغانستان دہشت گردوں کے خلاف امتیاز نہیں برتتا اور اس کو غیر قانونی قرار دیتا ہے۔ افغان وزارت خارجہ کے مطابق افغانستان اور پاکستان کے درمیان مجرموں اور جرائم پیشہ افراد کے تبادلے کا معاہدہ موجود نہیں ہے اس لیے اسلم فاروقی کیساتھ افغانستان کے قوانین کے مطابق سلوک کیا جائےگا۔ وزارت خارجہ کے مطابق دونوں ممالک مشترکہ سیکورٹی و امن پلان کے تحت معلومات پر تبادلہ کر سکتے ہیں، اس سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مدد ملے گی۔

You might also like More from author