’ایسی سکرپٹ لے کر کنگنا کے پاس آئے بھگوان ہی بچائے‘

اس سال انڈین اعزاز پدم شری حاصل کرنے والوں میں کرن جوہر اور کنگنا رناوت بھی شامل ہیں۔ یوں تو یہ ایوارڈ 118 لوگوں دیا گیا ہے لیکن سب سے زیادہ ذکر عدنان سمیع کے ساتھ ساتھ کرن جوہر اور کنگنا رناوت کا ہو رہا ہے۔

عدنان سمیع کے بارے میں سوشل میڈیا پر کافی بات ہو چکی لیکن کنگنا اور کرن کا قصہ اب زیادہ رنگین ہوتا جا رہا ہے۔ ایوراڈ ملنے کے بعد انٹرویوز کا سلسلہ شروع ہوا اور جب لوگوں نے کرن سے کنگنا کے ایوارڈ کے بارے میں پوچھا تو کرن نے ان کے ٹیلنٹ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس ایوارڈ کی مستحق ہیں کیونکہ وہ بہت اچھی اداکارہ ہیں۔

یہاں تک تو ٹھیک تھا لیکن کرن نے یہ کہہ کر مصیبت کو بلاوا دے ڈالا کہ انھیں کنگنا کے ساتھ کام کرنے میں کوئی اعتراض نہیں اور اگر ان کے پاس کوئی سکرپٹ ہو گا تو وہ کنگنا کو ضرور بلائیں گے۔

ایسے میں کنگنا کی بہن رنگولی کہاں خاموش رہنے والی تھیں فوراً ٹوئٹر پر سوار ہو کر کرن کے کان کھینچنے پہنچ گئیں۔

اپنی ٹوئٹ میں رنگولی نے لکھا کہ کنگنا کرن کی فلم میں کبھی کام نہیں کریں گی کیونکہ کرن کے پاس کنگنا کے لائق کوئی سکرپٹ ہو ہی نہیں سکتا اس لیے تم کنگنا سے دور رہو۔

یہ سب لکھ کر بھی جب رنگولی کو سکون نہیں ملا تو انھوں نے ایک اور ٹوئٹ میں لکھا جب کنگنا نے کرن جوہر کی فلم اے دل ہے مشکل دیکھی تھی تو اسے بہت غصہ آیا تھا، جس میں فلم کا ہیرو کینسر سے متاثر ہیروئن کو کس کرنے کی ضد کرتا ہے۔ رنگولی کا کہنا ہے کہ اگر وہ ایسی سکرپٹ لے کر کنگنا کے پاس آئیں گے تو انھیں بھگوان ہی بچا سکتا ہے۔

تاہم ان ٹوئٹس پر کرن کا ابھی تک کوئی ردِ عمل نہیں آیا ہے۔

You might also like More from author