ضرب عضب اور نظریہ ءپاکستان کی تکمیل

جو موضوعات ہمیشہ زندہ رہتے ہیں ان سے متعلق لکھی گئی تحریوں کا
یہ سلسلہ ءنشر مکرّر آپ کے لئے دلچسپی سے خالی نہیں ہوگا۔۔۔

ضرب عضب اور نظریہ ءپاکستان کی تکمیل گوادر میں ” پاک چین راہداری منصوبے“ پر ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف نے چند باتیں بے حد خیال انگیز کہی ہیں۔ ایک بات تو وہ ہے جو ہماری صفوں میں موجود ” بھارت لابی “ کے علاوہ ہر شخص کہہ رہاہے اور وہ یہ کہ بھارت کی خفیہ ایجنسی ” را“ پاکستان کو غیر مستحکم کرنے میں اپنی پوری توانائیوں کے ساتھ مصروف ہے )اس کی کھلی اور ناقابلِ تردید مثال کلبھوشن یادیو ہے(۔ اور دوسری بات یہ کہ ضربِ عضب محض ایک آپریشن نہیں پورا نظریہ ہے۔ اور اس نظریے کا مقصد دہشت گردوں ¾ انتہاپسندوں اور کرپشن میں ڈوبے ہوئے عناصر کے درمیان گٹھ جوڑ کا خاتمہ ہے۔
” ضرب ِ عضب“ کی ترکیب جس تصور پر مبنی ہے اس پر نظر ڈالی جائے تو آرمی چیف کی اِس بات کا مطلب سمجھنے میں کوئی دشواری نہیں ہوگی۔ عضب آنحضرت کی تلوار کا نا م تھا۔ اُس تلوار نے جس طوفانی انداز میں شرک ¾ الحاد ¾ اور بدی کے عفریتوں کو ٹھکانے لگا کر انسانی تاریخ کا سب سے بڑا انقلاب بپا کیا تھا اس کا علم ساری دنیا کو ہے۔ اگر آپریشن ضربِ عضب درحقیقت اس عظیم تلوار کے تقدس کے ساتھ پورا کرنے کے لئے شروع ہوا تھا اور آج بھی جاری ہے تو کوئی وجہ نہیں کہ اس کے نتائج جلد یا بدیر سامنے نہ آئیں۔
آرمی چیف نے یہ بات ایک ایسے مرحلے پر کہی ہے جب پورے ملک میں ہی نہیں پوری دنیا میں ” پاناما پیپرز“ اور اس ترکیب کے ساتھ منسلک ” فلک بوس کرپشن “ کا شور و غوغاہے۔
اگر ہمارے آرمی چیف یہ بات سمجھتے ہیں کہ اس ملک کی تقدیر کے خلاف سب سے بڑی دہشت گردی سر سے پاﺅں تک کرپشن میں ڈوبے ہوئے عناصر کررہے ہیں تو پھر آپریشن ضربِ عضب واقعی نظریہ ءپاکستان کی تکمیل ثابت ہوگا۔۔۔
)یہ کالم اس سے پہلے بھی 14-04-2016کو شائع ہوا تھا(

You might also like More from author