طاہر القادری کیساتھ ہیں،بھرپور تعاون کریں گے، عمران خان

  • سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے انصاف کےلئے جدوجہد میں شانہ بشانہ ہونگے‘چیئرمین پی ٹی آئی کی یقین دہانی
  • مسلمانوں کی طرف سے ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کرتا ہوں‘ تمام مسلم سربراہان کو اس معاملے پر کھڑے ہونا چاہیے
ISLAMABAD, DEC 07: Chairman PTI, Imran Khan presiding over a meeting at Bani Gala, on Thursday.=DNA PHOTO

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) چیئرمین پی ٹی آئی نے ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ جیسے لوگ مسلمانوں کو انسان نہیں سمجھتے، تمام مسلم ممالک کو اس فیصلے کے خلاف کھڑا ہونا چاہیے۔انسداد دہشت گردی عدالت میں پیشی سے قبل میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ مسلمانوں کی طرف سے ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کرتا ہوں، اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں کی زمین پر قبضہ اور لوگوں کو شہید کیا گیا۔امریکا کے مقبوضہ بیت المقدس میں اپنے سفارتخانے کی منتقلی سے متعلق سوال پر عمران خان نے کہا کہ سارے مسلمان ممالک کے سربراہان کو اس معاملے پر کھڑے ہونا چاہیے، ٹرمپ جیسے لوگ مسلمانوں کو انسان ہی نہیں سمجھتے اور وزیراعظم کو بھی ترک صدر رجب طیب اروان جیسا قدم اٹھانا چاہیے۔عمران خان نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاو¿ن میں نہتے لوگوں کو گولیاں ماری گئیں اور جاں بحق ہونے والوں میں دو خواتین بھی تھیں، شہباز شریف اور رانا ثنااللہ کو دہشت گردی کے کیس میں اندر جانا چاہیے، اس سلسلے میں ہم طاہرالقادری کو اعتماد دلانا چاہتے ہیں کہ جب وہ سڑکوں پر نکلیں گے تو ان کے ساتھ ہوں گے۔اپنے اوپر عائد مقدمات کو حوالہ دیتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہم نے صاف اور شفاف الیکشن کے لئے پرامن سیاسی احتجاج کیا تو مجھ پر دہشت گردی کا مقدمہ بنادیا گیا، امر کی گود میں پلنے والے ہی کسی پر اس طرح دہشت گردی کا کیس کر سکتے ہیں، ملک میں حکومت کہیں نظر نہیں آ رہی ہے۔

ااسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا ہے کہ قوم کا پیسہ لوٹنے والوں سے ہاتھ نہیں ملاتا انہیں اڈیالہ جیل بھجواو¿ں گا۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے سفارت خانے منتقل کرنے کی مذمت کرتا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ پہلے فلسطینیوں کی زمینوں پرقبضہ کیا گیا، اب اسرائیلی دارالحکومت کومنتقل کیا جانا افسوسناک ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کہ پرامن احتجاج اوردہشت گردی میں فرق ہے، طاہرالقادری کے ساتھ ہیں ، پورا تعاون کریں گے۔

عمران خان نے کہا کہ ہمارے وزیراعظم کوترک وزیراعظم کی طرح اسٹینڈ لینا چاہیے، ساری مسلم دنیا کواس فیصلے کے خلاف کھڑا ہونا چاہیے۔

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کہ نہتے لوگوں کودن دیہاڑے قتل کردینا اصلی دہشت گردی ہے، قوم کا پیسہ لوٹنے والوں سے ہاتھ نہیں ملاتا انہیں اڈیالہ جیل بھجواو¿ں گا۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ نے عمران خان کے خلاف 4 مقدمات کی اے ٹی سی میں سماعت 11 دسمبرتک ملتوی کردی گئی

Scroll To Top