غذائیت سے بھرپور لوبیا اور پھلیاں

eپھلیاں کئی امراض سے بچاکر آپ کی صحت پر بہترین اثرات مرتب کرتی ہیں۔ فوٹو: فائل

 لندن: گوشت کے مسلسل استعمال سے آپ کی صحت کا توازن خراب ہوسکتا ہے مگر ان کے مقابلے میں سبزی خور افراد طویل عمر پاتے ہیں جب کہ پھلیاں سبزیوں میں نمایاں مقام رکھتی ہیں ان کے فوائد پڑھ کر آپ بھی پھلیاں کھانے پر مجبور ہوجائیں گے۔

پروٹین کا خزانہ

اگر آپ کسی طرح پروٹین کی کمی کے شکار ہیں تو پھلیاں (بینز) اس کا بہترین علاج ہیں، ان میں موجود امائنو ایسڈ جسم میں پروٹین بناتا ہے،  پروٹین کو بھی دو اقسام میں بیان کیا جاتا ہے یعنی مکمل اور نامکمل پروٹین، سویا، حیوانی گوشت اور دودھ وغیرہ میں مکمل پروٹین پایا جاتا ہے جس میں تمام 9 اقسام کے امائنو ایسڈ پائے جاتے ہیں جبکہ سویابین میں تمام نو اقسام کے امائنو ایسڈز موجود ہوتے ہیں۔

اسی طرح اناج، ڈیری مصنوعات، خشک میووں وغیرہ کا استعمال کرکے آپ تمام امائنو ایسڈز کی کمی پوری کرسکتے ہیں، دن میں ایک مرتبہ مکمل پروٹین کی غذا ضرور کھانی چاہیے اگر آپ چاول کے ساتھ لوبیا یا پھرسیاہ لوبیا اور شام میں بادام اور پنیر کھائیں گے تو آپ کی روزمرہ مکمل پروٹین کی ضرورت پوری ہوجائے گی۔

غذائیت سے بھرپور

پھلیوں میں فولیٹ نامی مرکب موجود ہوتا ہے جو ماں کے پیٹ میں بچے کے اعصابی نظام کی تشکیل کرتا ہے اگر ماں فولیٹ نہ کھائے تو اس سے بچے کی اعصابی نشوونما متاثرہوتی ہے، خشک پھلیوں میں فولیٹ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اس اہم شے کی کمی سے کمزوری، دل کی دھڑکن، بھوک کی کمی اور دیگر کیفیات جنم لیتی ہیں، پھلیوں میں پولی فینولز جیسے طاقتور اینٹی آکسیڈنٹس بھی پائے جاتے ہیں اور یوں کئی امراض سے محفوظ رکھتے ہیں۔

پھلیاں اور دل کی صحت

یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ لوبیا کھانے والے افراد دل کے امراض کے شکار کم ہی ہوتے ہیں اس کی اہم وجہ یہ ہے کہ لوبیا اور دیگر پھلیاں کھانے سے کولیسٹرول قابو میں رہتا ہے علاوہ ازیں یہ دل کی رگوں کی حفاظت بھی کرتی ہیں۔

کینسر کو بھگائے

ہم جانتے ہیں کہ اینٹی آکسیڈنٹس بدن میں سوزش و جلن کم کرتے ہیں، ماہرین اب تک متفق ہیں کہ جسمانی اندرونی جلن اور سوزش اور کینسر کے درمیان ایک تعلق پایا جاتا ہے، قبل ازیں 2015 میں ماہرین نے ایک سروے میں انکشاف کیا تھا کہ سیاہ لوبیا آنتوں اور معدے کے کینسر سے بچاتی ہیں کیونکہ یہ اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور ہوتی ہیں۔

ذیابیطس سے بچائے

پھلیوں میں ریشہ یعنی فائبر کی زبردست مقدار موجود ہوتی ہے جو خون میں گلوکوز کی مقدار کنٹرول کرتی ہے، ماہرین نے یہ بھی کہا ہے کہ لوبیا انسانی لبلبے کی کارکردگی بہتر بنا کر ذیابیطس کو روکتی ہے۔

جگر کی چربی کو روکے

دنیا بھر کی طرح پاکستانیوں کی اکثریت جگر کی چربی (فیٹی لیور) میں مبتلا ہے، سال 2016ء میں کی گئی ایک تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ایک طرح کی لوبیا جگر میں چربی جمع ہونے سے روکتی ہے اور یہ بات چوہوں پر تجربات سے ثابت ہوچکی ہے، ماہرین کے مطابق جگر پر چربی کی زیادتی کئی طرح کے مسائل کی وجہ بنتی ہے۔

بھوک اور ہاضمے کے لیے بہترین

اگر آپ کو بار بار بھوک لگتی ہے اور آپ موٹاپے کی جانب مائل ہیں تو لوبیا اور پھلیاں اس کا بہترین علاج ہیں،اس کے لیے کوشش کریں کہ ہر طرح کی پھلیاں کھائی جائیں کیوں کہ پھلیاں آنتوں میں مفید بیکٹیریا کو پروان چڑھا کر نظامِ ہضم  کو مجموعی طور پر بہتر بناتی ہیں۔

Scroll To Top