اسحاق ڈار کی دو نئی جائیدادوں کا انکشاف، چیئرمین نیب نے منجمد کر دیں

  • جائیدادوں کی منتقلی کے خدشات موجود ہیں عدالت منجمدی کے فیصلے کی توثیق کرے،نیب کی درخواست

اسحاق ڈار احتساب عدالت میں پیش کل فرد جرم عائد ہو گی

اسلام آباد (این این آئی) نیب نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی مزید دو جائیدادیں منجمد کرنے کے فیصلے کی توثیق کےلئے احتساب عدالت سے رجوع کر لیا ۔منگل کو نیب پراسیکیوٹر نے احتساب عدالت میں درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس کی تحقیقات میں دو نئی جائیدادیں سامنے آئی ہیں،یہ جائیدادیں اسحاق ڈار،ان کی اہلیہ،کمپنیز کے نام پر تھیں جو بعد میں ٹرسٹ کو منتقل کی گئیں،ایک جائیداد ایم ایم عالم روڈ گلبرگ تھری لاہور میں واقع ہے،یہ جائیداد ہجویری فاونڈیشن کے نام پر ہے،دوسری جائیداد پلاٹ نمبر 33اور34ہالیڈے پارک علی رضا آباد رائیونڈ روڈ پر واقع ہے،یہ پلاٹ ہجویری ٹرسٹ کے نام پر ہے، چیئرمین نیب نے اپنے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے ان جائیدادوں کو منجمد کرنے کا حکم دیا،ان جائیدادوں کو کسی اور کے نام منتقل کرنے یا بیچنے کے خدشات موجود ہیں ،نیب نے استدعا کی کہ عدالت ان دو جائیدادوں کو منجمد کرنے کے نیب کی فیصلے کی توثیق کرے۔

Scroll To Top