بھارت میں بھکاری پکڑوانے والے کو نقد انعام کا اعلان

iٹرمپ کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ کا دورہ حیدرآباد کی وجہ سے بھکاری مہم کا آغاز کیا گیا ہے،تجزیہ نگار۔فوٹو: فائل

 ممبئی: بھارتی  شہر حیدر آباد دکن کی پولیس نے شہر کو بھکاریوں سے پاک کرنے کے لئے انوکھی مہم کا آغاز کردیا ہے جس کے تحت جو شخص کسی بھکاری کی نشاندہی کرے گا اسے 500  روپے نقد انعام دیا جائے گا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جب سے نریندرا مودی وزیر اعظم بنے ہیں بھارت میں ہندو اشتعال انگیزی بڑھنے کے ساتھ ساتھ آئے دن عجیب و غریب مہم دیکھنے میں آتی ہیں۔ کچھ روز قبل پولیس کی جانب سے مہم شروع کی گئی تھی جس میں کھلے میں رفع حاجت کرنے والوں کو پکڑکر انہیں برہنہ کرکے وڈیو بنائی جاتی تھی، جس پر اُن کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا لیکن اب ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے مشترکہ دارالحکومت حیدرآباد دکن کی پولیس نے شہر کو بھکاریوں سے پاک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

حیدرآباد شہر کے پولیس کمشنر نے شہر میں دو ماہ کے لیے بھیک مانگنے پر پابندی لگادی ہے، اس کے علاوہ عبادت گاہوں، عوامی مقامات اور بازاروں میں بھی بھکاریوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کررکھا ہے، پولیس نے شہر کو بھکاریوں سے پاک کرنے کے لیے خصوصی مہم کا اعلان کیا ہے جس کا اطلاق 12 دسمبر سے ہوگا لیکن اس مہم کے تحت بھکاریوں کی نشان دہی کرنے والے شہری کو 500 روپے انعام دیا جائے گا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ شہر بھر سے اب تک 366 بھکاریوں کو پکڑا گیا ہے جس میں سے 128 بھکاریوں کو خصوصی مراکز میں داخل کرایا گیا ہے جب کہ 238 بھکاری آئندہ ہاتھ نہ پھیلانے کی یقین دہانی پر ان کے گھر بھجوا دیئے گئے ہیں۔

مقامی افراد کا کہنا ہے کہ حیدر آباد پولیس کی اس مہم کا مقصد شہر کو بھکاریوں سے پاک کرنا نہیں بلکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا کے 28 اور 29 نومبر کو دو روزہ دورے کے لیے تیاریاں کرنا ہے کیونکہ حکومت کو خطریہ ہے کہ اگر ایوانکا کے سامنے بھکاری آگئے تو بھارت کے دعوؤں کا پول نہ کھل جائے۔

Scroll To Top