باجوڑ ایجنسی: دہشتگردوں کے سرحد پار سے حملے میں پاک فوج کا کیپٹن اور سپاہی شہید

  • سیکیورٹی فورسز کا موثر جواب ،10 دہشتگردجہنم واصل ، متعدد زخمی ،فائرنگ کے تبادلے میں دھرتی کے بہادر سپوت کیپٹن جنید حفیظ اور سپاہی رحم شہید ، 4 جوان زخمی
  • افغانستان میں سیکیورٹی خلا کی قیمت چکا رہے ہےں، دہشت گردی کے خلاف بہت کچھ کیا ، اب افغانستان بھی اپنی ذمہ داری نبھائے، ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور

باجوڑ ایجنسی: دہشتگردوں کے حملے سرحد پار سے حملے میں پاک فوج کا کیپٹن اور سپاہی شہید

راولپنڈی(این این آئی)پاک افغان سرحد پر دہشتگردوں کے سرحد پار حملے میں پاک فوج کے کیپٹن جنید حفیظ اور سپاہی رحم شہید جبکہ چار فوجی زخمی ہو گئے ، پاکستانی سیکیورٹی فورسز نے حملے کا موثر جواب دیتے ہوئے 8 سے 10 دہشتگردوں کو ہلاک اور متعدد کو زخمی کر دیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق پاک افغان سرحد پر باجوڑ ایجنسی کے علاقہ میں دہشتگردوں نے افغانستان کی جانب سے حملے کی کوشش کی جس کا موثر جواب دیا گیا ۔ پاکستانی سیکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں فرار ہونیوالے 8 سے 10 دہشتگرد مارے گئے جبکہ کئی زخمی بھی ہوئے ۔ فائرنگ کے تبادلے میں دھرتی کے بہادر سپوت کیپٹن جنید حفیظ اور سپاہی رحم شہید اور چار فوجی زخمی ہو گئے ۔ سرحد پر افغان سائیڈ پر کسی رٹ کی غیر موجودگی کے باعث کئی دوسرے علاقوں کی طرح دہشتگردوں کو اس علاقہ سے بھی ایسے حملوں میں مدد ملتی ہے ۔۔۔بعد ازاں آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) میجر جنرل آصف غفور نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ’آج مزید 2 جوانوں نے جام شہادت نوش کیا، پاکستان سرحد پار افغانستان میں سیکیورٹی خلا کی قیمت چکا رہا ہے، پاکستان نے اپنی طرف سے دہشت گردی کے خلاف بہت کچھ کیا اور علاقوں کو خالی کیا۔‘انہوں نے کہا کہ ’ہم علا قے خالی کرانے کے بعد پاک افغان بارڈر پر باڑ لگا رہے ہیں، اپنی موجودگی بڑھا رہے ہیں، بارڈر پر نئی پوسٹیں، کراسنگ پوائنٹ قائم کیے جا رہے ہیں، اب افغانستان بھی اپنی ذمہ داری نبھائے۔‘ن کا کہنا تھا کہ ’سرحد کے دونوں اطراف فورسز اور شہریوں کی جانیں قیمتی ہیں، افغانستان میں دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کے خاتمے کی ضرورت ہے جبکہ پاک افغان سرحد پر مو¿ثر سیکیورٹی یقینی بنانی ہوگی۔‘

Scroll To Top