افغانستان کا چالیس فیصد علاقہ اب بھی طالبان کے قبضے میں ہے ، احسن اقبال

  • دہشتگردی کےخلاف جنگ محاذ آرائی سے نہیں بلکہ باہمی تعاون سے ہی جیتی جا سکتی ہے‘ وفاقی وزیر داخلہ کا انٹر ویو
اسلام آباد۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں

لاہور( این این آئی )وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ عالمی برادری دہشتگردی کے خلاف جنگ محاذ آرائی سے نہیں بلکہ صرف تعاون سے ہی جیت سکتی ہے،پاکستان میں دہشتگردوں کی کوئی محفوظ پناہ گاہیں نہیں ہیں ،سکیورٹی فورسز نے ملک بھر سے ان کے تمام ٹھکانے ختم کر دیئے ہیں۔ایک انٹر ویو میں انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف بھاری قیمت ادا کی ہے ۔ہماری سکیورٹی فورسز دن رات کارروائیاں کر رہی ہیں۔احسن اقبال نے پاکستان کوپرامن ملک اور خطے کی معاشی قوت بنانے کا عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کو پھلنے پھولنے کا موقع دینا پاکستان کے خطے کی معاشی قوت بننے کے ہدف سے مطابقت نہیں رکھتا۔ایک سوال کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہا کہ امریکہ نے افغانستان میں 30کھرب ڈالر سے زائد خرچ کئے ہیں لیکن وہ وہاں امن بحال کرنے میں ناکام ہے۔ افغانستان کا چالیس فیصد علاقہ اب بھی طالبان کے قبضے میں ہے اور انہیں پاکستان میں محفوظ پناہ گاہوں کی کوئی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایک امریکی خاندان کی محفوظ بازیابی پاکستان اور امریکہ کے درمیان تعاون کی شاندار مثال ہے۔ایک سوال کے جواب میں احسن اقبال نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری سے توانائی بنیادی ڈھانچے اور مواصلات سمیت مختلف شعبوں میں پاکستان کو سرمایہ کاری اور تعاون کے وسیع مواقع ملے ہیں جو معاشی ترقی کے لئے ضروری ہیں۔

Scroll To Top