اسحاق ڈار کے ایک اور کارنامے کا انکشاف:146ارب روپے کے فراڈ کی تحقیقات کرنیوالی کمیٹی تحلیل کر دی

  • ایف بی آر کے سینئر افسران پر مشتمل کمیٹی نے پہلے 118 ارب روپے کے جعلی ٹیکس استثنیٰ کی تحقیقات کرنا تھیں لیکن اس دوران 28 ارب روپے کے مزید جعلی سرٹیفکیٹس جاری کر دیے گئے
  • کمیٹی کام جاری رکھتی تو بدعنوانی کے مرتکب متعدد ذمہ داران گرفت میں آسکتے تھے لیکن معطلی کے باعث کمیٹی اپنے فرائض سر انجام دینے سے قاصر ہے ، رپورٹ

اسحاق ڈار احتساب عدالت میں پیش کل فرد جرم عائد ہو گی

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے ایک سو چھیالیس ارب روپے کے فراڈ کی تحقیقات کیلئے قائم ایف بی آر کی کمیٹی تحلیل کردی۔ایف بی آر کے سینئر افسران پر مشتمل کمیٹی گزشتہ ماہ بنائی گئی تھی۔ کمیٹی نے پہلے 118 ارب روپے کے جعلی ٹیکس استشنی کے فراڈ کی تحقیقات کرنا تھیں۔ اس دوران 28 ارب روپے کے مزید جعلی سرٹیفکیٹ جاری ہوئے۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر کے اعلی افسران نے ستمبر میں اسحاق ڈار سے کمیٹی کی کاروائی رکوا دی تھی۔ اگر یہ کمیٹی کام جاری رکھتی تو جعلی سرٹیفکیٹ جاری کرنیوالے متعدد افسران پکڑ میں آسکتے تھے۔ رابطہ کرنے پر متعلقہ افسران نے 92 نیوز کو بتایا کہ اب یہ کمیٹی معطل ہے اور یہ دوبارہ کام شروع نہیں کر سکتی۔

Scroll To Top