توہین عدالت کیس، عمران خان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

  • 5رکنی بینچ میں سے2ارکان کی مخالفت ، الیکشن کمیشن کا چیئرمین پی ٹی آئی کو26اکتوبر کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم
  • الیکشن کمیشن کے پاس وار نٹ جاری کرنے کا اختیارنہیں، یہ ادارہ تعصب پسند ہے،ترجمان تحریک انصاف نعیم الحق

لاہور: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان قرطبہ چوک میں منعقدہ ایک بڑے عوامی جلسہ عام سے خطاب کر رہے ہیں

اسلام آباد(صباح نیوز) الیکشن کمیشن نے توہین عدالت کیس میںچیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے خلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے ہیںاور چیئرمین پی ٹی آئی کو 26 اکتوبر کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا ۔جمعرات کوالیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی کے سابق رہنما اکبر ایس بابر کی درخواست پر پارٹی فنڈنگ کیس کی سماعت ہوئی۔ الیکشن کمیشن کے 5رکنی بینچ میں سے سندھ اور پنجاب کے 2ممبرز نے عمران خان کے وارنٹ گرفتاری کی مخالفت کی تاہم 3 ممبرز نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے چیئرمین تحریک انصاف سے اکبر ایس بابر کی درخواست پر جواب طلب کرلئے۔الیکشن کمیشن نے حکم دیا ہے کہ عمران خان کو توہین عدالت کیس میں 26 اکتوبر کو گرفتار کرکے پیش کیا جائے، عدالت نے کیس کی سماعت 26 اکتوبر تک ملتوی کردی۔واضح رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے گزاشتہ روز عمران خان کی جانب سے الیکشن کمیشن میں جواب نہ کرانے کے بعد فیصلے کا اختیار الیکشن کمیشن کو دے دیا تھا۔جمعرات کوترجمان تحریک انصاف نعیم الحق نے نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن کے پاس وار نٹ جاری کرنے کا اختیارنہیں، یہ ادارہ تعصب پسند ہے، عمران خان نے کبھی پیش ہونے سے انکارنہیں کیا۔ انہوں نے کہا الیکشن کمیشن نے عدالتی فیصلے کی توہین کی ہے، آج تک کسی بھی سیاستدان کے خلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری نہیں کئے گئے۔

Scroll To Top