اسحاق ڈار استعفیٰ دیں گے ، نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ

  • حدیبیہ کیس،ناجائز اثاثہ جات نیب ریفرنس، اسحاق ڈار پاکستان واپس نہیں جائینگے، لندن میں ہی قیام پذیر رہینگے، وہ لندن سے ہی استعفیٰ بھجوائیں گے‘ ذرائع
  • اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ شریف فیملی بھی اگلے چھ مہینے تک پاکستان واپس نہیں آئے گی‘ بیگم کلثوم نواز کی واپسی بھی موخر

l


لندن(نامہ نگار)نواز شریف کی زیرصدرات لندن میں ہونے والے اجلاس میں یہ فیصلہ کر لیا گیا کہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائیں گے،جبکہ وہ مستعفی ہونے کے بعد وہ پاکستان نہیں جائیں گے۔نجی نیوز چینل کا اپنا ذرائع کے حوالے سے کہنا ہے کہ آج لندن میں ہونے والے نواز شریف کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ اسحاق ڈارکچھ دنوں تک استعفی دے دیں گے،تاہم اسحاق ڈار پاکستان واپس نہیں جائیں گے وہ لندن میں ہی قیام پذیر رہیں گے۔اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ اسحاق ڈار اپنا استعفی بھی لندن سے ہی دیں گے ،جسے فوری طورپر قبول کیا جائے گا،جبکہ اسحاق ڈار کو نیب کے سمن سوموار کوہائی کمیشن کے ذریعے پہنچا دئیے جائیں گے۔اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ شریف فیملی بھی اگلے چھ مہینے تک پاکستان واپس نہیں آئے گی۔ دوسری جانب بیگم کلثوم نواز کے متعلق بھی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ وہ آئندہ چار سے چھ ماہ سفر نہیں کر سکیں گی جس کے باعث شاید این اے 120 کا الیکشن دوبارہ کرانا پڑے اور امکان ہے کہ یہ الیکشن شہباز شریف لڑیں گے اور پھر انہیں قومی اسمبلی سے وزیر اعظم منتخب کروایا جائے گا۔

Scroll To Top