بیگم کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کیخلاف کیس کی اہم سماعت آج ہو گی

  • پارٹی کے امیدوار فیصل میر ،پاکستان عوامی تحریک اوردو شہریوں کی طرف سے بیگم کلثوم نواز نے کاغذات نامزدگی کی منظور ی کے خلاف ہائیکورٹ میں استدعا کی ہے
  • مسٹر جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں تین رکنی فل بنچ نے سماعت کیس کی سماعت کر ے گا، بیگم کلثوم نواز کے خلاف سندھ میں بغاوت کا مقدمہ درج ہے‘ عوامی تحریک

کلثوم نوازلاہور( سٹاف رپورٹر)لاہورہائیکورٹ کے جسٹس امین الدین خان ،جسٹس شاہد جمیل اور جسٹس عبادالرحمن لودھی پرمشتمل فل بنچ نے حلقہ این اے 120سے مسلم لیگ (ن) کی امیدوار بیگم کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف دائر 4 درخواستوں پر بیگم کلثوم اور الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب13ستمبر تک طلب کیا ہے۔دوران سماعت عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ضمنی انتخاب سے قبل درخواستوں پر فیصلہ سنایا جائے گا۔پیپلز پارٹی کے امیدوار فیصل میر ،پاکستان عوامی تحریک اوردو شہریوں کی طرف سے دائر درخواستوں میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ بیگم کلثوم نواز نے کاغذات نامزدگی میں اپنی آمدنی اور اثاثے ظاہر نہیں کئے۔عدالت نے درخواست گزار کو مقدمے کی اردو ترجمہ پر مشتمل مصدقہ ایف آئی آرکی کاپی عدالت کو کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 13ستمبر تک ملتوی کر دی تھی۔ مسٹر جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں تین رکنی فل بنچ نے سماعت کیس کی سماعت کر ے گا۔ پیپلزپارٹی کے امیدوار فیصل میر کے وکیل نے دلائل دیئے کہ بیگم کلثوم نواز نے کاغذات نامزدگی میں اپنی آمدن اور اثاثے ظاہر نہیں کئے۔ بیگم کلثوم نواز نے خود کو نوازشریف کی زیرکفالت ظاہر کیا مگر وہ کئی کمپنیوں میں شیئر ہولڈر ہیں۔ عوامی تحریک کے وکیل نے بتایا کہ بیگم کلثوم نواز کے خلاف سندھ میں بغاوت کا مقدمہ درج ہے جس میں بیگم کلثوم نواز مفرور ہیں۔ فاضل عدالت نے ریمارکس دیئے کہ آگاہ کیا جائے کہ ریٹرننگ افسر نے درخواستوں کو کن وجوہات پر مسترد کیا۔

Scroll To Top