نواز شریف کی رخصتی میں فوج کا کوئی کردار نہیں ، چوہدری نثار

  • سپریم کورٹ اور فوج سے محاذ آرائی کا راستہ غلط ہے، محاذ آرائی کا مشورہ دینے والے لوگ پارٹی میں اقلیت میں ہیں،محاذ آرائی سے کوئی سیاسی مقاصد حاصل نہیں ہو سکتے،اس سے ہم اپنی پوزیشن بہتر نہیں بلکہ کمزور کریں گے
  • مریم نواز کو لیڈر ماننے سے انکار‘مریم نواز کا بینظیر کے ساتھ موازنہ کرنا مناسب نہیں ، بچے بچے ہوتے ہیں اور وہ غیرسیاسی ہوتے ہیں اس لئے مریم نواز کو لیڈر کیسے مانا جاسکتا ہے؟ ‘سابق وزیر داخلہ کا نجی چینل کو انٹرویو

chnisar


اسلام آباد(صباح نیوز)سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ نواز شریف کی رخصتی میں فوج کا کوئی کردار نہیں ، سپریم کورٹ اور فوج سے محاذ آرائی کا راستہ غلط ہے،۔نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کے دوران چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ فوج سے ہماری کوئی لڑائی نہیں نہ فوج کا نواز شریف کی رخصتی میں کوئی کردار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ محاذ آرائی سے ہم اپنی پوزیشن بہتر نہیں بلکہ کمزور کریں گے۔ محاذ آرائی کا مشورہ دینے والے لوگ پارٹی میں اقلیت میں ہیں۔چوہدری نثار کے کہا کہ محاذ آرائی سے کوئی سیاسی مقاصد حاصل نہیں ہو سکتے۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز کا بینظیر کے ساتھ موازنہ کرنا مناسب نہیں ، بچے بچے ہوتے ہیں اور وہ غیرسیاسی ہوتے ہیں اس لئے انہیں لیڈر کیسے مانا جاسکتا ہے۔چوہدری نثار نے کہا کہ مریم نواز کو لیڈر بننا ہے تو پہلے عملی سیاست میں حصہ لیں اور انہیں سیاست میں حصہ لے کر خود کو ثابت کرنا ہوگا۔نجی نیوز چینل کے پروگرام جرگہ میں خصوصی گفتگو کے دوران چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ فوج سے ہماری کوئی لڑائی نہیں نہ فوج کا نواز شریف کی رخصتی میں کوئی کردار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ محاذ ا?رائی سے ہم اپنی پوزیشن بہتر نہیں بلکہ کمزور کریں گے۔ محاذ ا?رائی کا مشورہ دینے والے لوگ پارٹی میں اقلیت میں ہیں۔

Scroll To Top