سعودی عرب میں ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا

eee
سعودی عرب میں ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا لہٰذا حج کا رکن اعظم ’وقوف عرفہ‘ 31 اگست اور عید الاضحیٰ یکم ستمبر کو ہوگی۔

سعودی سپریم جوڈیشل کونسل نے ملک میں کہیں بھی چاند نظر آنے کے شواہد نہ ملنے کا اعلان کیا، لہٰذا یکم ذی الحج 23 اگست کو ہوگی اور سعودی عرب سمیت دیگر خلیجی ممالک میں عید الاضحیٰ یکم ستمبر کو منائی جائے گی۔

مناسک حج کی ادائیگی 30 اگست سے شروع ہوگی اور دنیا بھر سے آئے لاکھوں عازمین حج 8 ذی الحج کو میقات سے احرام باندھ کر مکہ مکرمہ آئیں گے، جہاں وہ بیت اللہ کا طواف کرنے کے بعد ’تلبیہ‘ پڑھتے ہوئے منیٰ کا رخ کریں گے۔

منیٰ میں رات گزارنے کے بعد عازمین 9 ذی الحج کو میدان عرفات کا رخ کریں گے جہاں وہ حج کے رکن اعظم ’وقوف عرفہ‘ ادا کریں گے۔

عازمین بعد نماز مغرب میدان عرفات سے ’مزدلفہ‘ روانہ ہوں گے، وہاں پہنچ کر عازمین مغرب اور عشا کی نماز اکھٹی ادا کریں گے اور رات کھلے آسمان تلے بسر کر کے ’رمی جمرات‘ کے لیے کنکریاں بھی جمع کریں گے۔

دس ذی الحج کی صبح عازمین منیٰ پہنچ کر بڑے شیطان کو کنکریاں مار کر قربانی کریں گے اور سر منڈوا کر احرام کھول دیں گے اور مکہ مکرمہ جا کر ’طواف الافاضہ‘ ادا کرکے واپس منیٰ آئیں گے۔

حجاج 11 اور 12 ذی الحج کو بھی شیطانوں کو کنکریاں ماریں گے جس کےبعد وہ دوبارہ مکہ مکرمہ جا کر ’طواف وداع‘ ادا کریں گے اور یوں ان کے مناسک حج مکمل ہوں گے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں ذی الحج کا چاند دیکھنے کے لیے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس منگل کو ہوگا۔

Scroll To Top