پٹرول راولپنڈی میں ہی ختم: نواز شریف کی ”تاریخی“ ریلی میں 1000کاروں کی شرکت

  • باوثوق ذرائع کے مطابق 5 سے 6 ہزار کے قریب لوگ جبکہ 700 سے 800 سرکاری اور نجی گاڑیاں قافلے میں شامل ،کشمیر، خیبرپختونخوا اور بلوچستان سے آنے والی ہزاروں گاڑیاں کہاں ہیں؟قمر زمان کائرہ رہنما پیپلزپارٹی کا لیگی رہنماﺅں سے استفسار
  • یہ ریلی گاڑیوں کی ہے عوام کی ہرگز نہیں ، طاہر القادری سربراہ پاکستان عوامی تحریک، یہ ’سلو کار ریلی' ہے، جس کا مقصد صرف کوئی راستہ تلاش کرنا ہے، شیخ رشید سربراہ عوامی مسلم لیگ ، ریلی کا آغاز انتہائی مایوس کن تھا جس کی بنا پر اس کی رفتار کم رکھی گئی ، سینیٹر اعتزاز احسن

پٹرول راولپنڈی میں ہی ختم: نواز شریف کی ”تاریخی“ ریلی میں 1000کاروں کی شرکتاسلام آباد(الاخبار نیوز)سپریم کورٹ کی جانب سے نااہل قرار دیے جانے کے بعد وزارت عظمیٰ سے سبکدوش ہونے والے نواز شریف گزشتہ روز پنجاب ہاﺅس اسلام آباد سے لاہور کیلئے روانہ ہوئے لیکن رات گئے تک راولپنڈی کی حدود سے باہر نہ نکل سکے لہذا رات پنجاب ہاﺅس راولپنڈی میں بسر کرنے کا فیصلہ کیا گیا، یاد رہے کہ نواز شریف کی ریلی کے پیش نظر راولپنڈی کے متعدد روٹس کو سیل کردیا گیا ہے، جبکہ ہوٹل، مالز اور دکانیں بند ہونے کی وجہ سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے، پولیس کے مطابق 5 سے 6 ہزار کے قریب لوگ جبکہ 700 سے 800 حکومتی اور نجی گاڑیاں قافلے میں شامل ہیں۔ ادھر پاکستان پیپلزپارٹی وسطی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ نے سابق وزیراعظم کی جی ٹی روڈ ریلی کو 'ناکام' قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نواز شریف کنٹینر کنٹینر کرتے خود کنٹینر پر چڑھ گئے۔لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران قمر زمان کائرہ نے دعووں کے برعکس ریلی میں بظاہر شرکاءکی کم تعداد پر سوال کیا کہ کشمیر، خیبرپختونخوا اور بلوچستان سے آنے والی ہزاروں گاڑیاں کہاں ہیں؟پیپلز پارٹی رہنما نے دعویٰ کیا کہ سرکاری ملازمین کو ریلی کے اخراجات 14 اگست کے خرچے میں ڈالنے کا کہا گیا ہے دریں اثناء پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے نواز شریف کی ریلی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ریلی گاڑیوں کی ہے عوام کی نہیں کیونکہ عوام نواز شریف کی کرپشن سے بخوبی آگاہ ہوچکے ہیں لہذا اب ان کے لئے سڑکوں پر آنے کو ہرگز تیار نہیں ہیں ادھر پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر اعتزاز احسن کا کہنا ہے کہ ریلی کا آغاز انتہائی مایوس کن تھا اور کم افراد کی شرکت کے باعث ہی ریلی کی رفتار کو کم رکھا گیا انہو ں نے کہا کہ گاڑیوںکی تعداد بھی زیادہ سے زیادہ تین سو کے لگ بھگ ہے دریں اثناءعوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے نواز شریف کی ریلی کو 'کمزور پاور شو' قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ نواز شریف کی سیاسی ریلی نہیں 'سلو کار ریلی' ہے، جس کا مقصد صرف کوئی راستہ تلاش کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتنے بندے تو میں بھی اکٹھے کر سکتا ہوں ریلی میں بندے نہیں صرف گاڑیاں ہیں جو کہ زیادہ زیادہ ایک ہزار کی تعداد میں ہیں یہ سارا کچھ بھی قومی وسائل کے بے دریغ استعمال کے بعد ممکن ہوا ہے، جس کا ثبوت وزیرقانون پنجاب راناثناءاللہ کا راولپنڈی کی انتظامیہ پر غصہ کرنا ہے، کہ وہ لوگوں کو اکٹھا کرنے میں کیوں ناکام رہی، یاد رہے کہ وزیر قانون پنجاب رانا ثنائ اللہ نے راولپنڈی کے کمیٹی چوک کا دورہ کیا اور سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا۔۔کمیٹی چوک پر عوام کی کم تعداد پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ 'جیسے جیسے نواز شریف کا قافلہ نزدیک آئے گا عوام کا جوش و خروش دیدنی ہوگا

Scroll To Top