کیا نوازشریف اور آصف زرداری نوشتہ ءدیوار کو مٹانے کی طاقت رکھتے ہیں ؟

aaj-ki-bat-logoعدلیہ پر سینٹ کے چیئرمین رضا ربانی کا اچانک حملہ اس بات کی طرف اشارہ کرتا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی نے اپنی حکمت عملی تبدیل کرلی ہے۔۔۔ گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران پی پی پی کے جتنے بھی ترجمان ٹی وی سکرین پر نمودار ہوئے ہیں اُن کا لہجہ واضح طور پر بدلا بدلا سا ہے جس سے یہ نتیجہ اخذ کرنا مشکل نہیں کہ زرداری صاحب کی طرف سے نئی ہدایات جاری ہوچکی ہیں۔۔۔

یہ سیاست دان کس قدر کھوکھلے اور بے شرم ہوتے ہیں اِس کا اندازہ اسی بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ کتنی تیزی سے ان کا قبلہ اور ان کی توپوں کا رخ تبدیل ہوتا ہے۔۔۔
ایک دو روزقبل تک پی پی پی اپنی تمام تر توانائیوں کے ساتھ عدلیہ کو ایک بڑا اور جرا¿ت مندانہ فیصلہ کرنے پر خراج تحسین پیش کررہی تھی۔۔۔ اور اب رضا ربانی فرمارہے ہیں کہ ” عدلیہ پارلیمنٹ پر حاوی ہونے کی جو کوششیں کررہی ہے وہ قوم کے لئے تشویش کا باعث ہیں۔۔۔ پہلے جو کام 58(2B)کے ذریعے کیا جاتا تھا وہ اب عدلیہ کے فیصلوں کے ذریعے ہورہا ہے۔۔۔“
کچھ عرصہ قبل تک رضا ربانی کے لئے میرے دل میں بڑا احترام تھا۔۔۔ مگر اب وہ مجھے تھیٹر کے اداکار لگتے ہیں۔۔۔ زرداری صاحب نے میاں صاحب کے صلاح مشورے سے انہیں سینٹ کا چیئرمین بنوا کر اُن کی عاقبت تک خرید لی ہے۔۔۔
بہرحال جن لوگوں کو خدشہ تھا کہ (ن)لیگ اور زرداری صاحب کا ” مک مکا“ ختم نہیں ہوا وہ لوگ کہہ سکتے ہیں کہ وہ غلط نہیں تھے۔۔۔
میاں نوازشریف اور زرداری صاحب کا حمام ایک ہی ہے۔۔۔ اورقبلہ بھی ایک اس مرتبہ جو ” مک مکا“ طے ہوتا نظر آرہا ہے اس کے نشانے پر ” عدلیہ “ پہلے ہے اور ” فوج“ بعد میں۔۔۔
لیکن کیا وہ ” نوشتہ ءدیوار“ کو مٹانے کی طاقت رکھتے ہیں ؟
میراجواب ہے ۔۔۔ ” نہیں “۔۔۔
آپ کا جواب کیا ہے ؟

Scroll To Top