بھارت نے مسئلہ کشمیر پر چین کے کردار ادا کرنے کی پیشکش مسترد کردی

iہم دو طرفہ فریم ورک کے تحت پاکستان سے کشمیر پر مذاکرات کے لیے تیار ہیں،بھارتی وزارت خارجہ فوٹو: فائل

نئی دلی: بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مسئلہ کشمیرپر چین کے تعمیری کردار ادا کرنے کی پیش کش مسترد کردی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق نئی دلی حکومت نے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی چین کی پیش کش مسترد کردی تاہم پاکستان کے ساتھ بات چیت پر آمادگی ظاہر کی ہے۔ گزشتہ روز چین نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان بھارت تعلقات میں بہتری کے لیے تعمیری کردار ادا کرنے کی پیش کش کی تھی۔

نئی دلی میں ہفتہ وار پریس کانفرنس کرتے ہوئے بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان گوپال بگلے نے کہا کہ ہمارا موقف واضح ہے کہ ایک مخصوص ملک سے سرحد پار دہشت گردی کی جا رہی ہے جس سے خود اُس ملک، خطے اور دنیا کے امن و استحکام کو خطرہ ہے، لیکن ہم دو طرفہ فریم ورک کے تحت پاکستان سے کشمیر پر مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔

چین اور بھارت کے درمیان بھی سکم سیکٹر میں سرحدی حدود کے تنازع پر کافی کشیدگی جاری ہے۔ اس حوالے سے گوپال بگلے نے انکشاف کیا کہ دونوں ممالک کشیدگی کم کرنے کے لیے سفارتی ذرائع استعمال کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ جی 20 اجلاس کے موقع پر چین کے صدر شی جن پنگ اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے درمیان مختلف امور پر گفتگو ہوئی۔

Scroll To Top