میاں صاحب حاضر ہوں….!!!

isma-tarar-logo

بالآخر وہ دن آہی گیا جس کا پوری قوم کو شدت سے انتظار تھا۔ جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کو طلب کرہی لیا۔ سنا ہے کہ میاں صاحب پیش ہونے کا ارادہ بھی رکھتے ہیں۔ تمام ن لیگ اس بات کو اس طرح پیش کر رہی ہے کہ جیسے میاں صاحب ہم پر کوئی احسانِ عظیم کر رہے ہوں حالانکہ یہ ان کا قانونی و اخلاقی فرض ہے۔ اکثر صحافی بھی اس کار خیرمیں اپنا حصہ ڈال رہے ہیں۔
اس کے ساتھ ہی #MainBheeNawazHoon کے عنوان سے ٹوئیٹر پر بھی ایک عجیب و غریب ٹرینڈ چلایا گیا ہے ۔ اس بات کا مطلب تو یہ نکلتا ہے کہ پوری قوم ہی کرپٹ ہے۔
جمعرات کے روز میاں صاحب اس قانون کی پاسداری کریں گے جس کا واویلا وہ خود اور ان کی جماعت اکثر اوقات کرتی رہتی ہے۔امید ہے کہ جے آئی ٹی میں پیش ہوتے وقت وہ کوئی جتھہ ا پنے ساتھ لے کرنہیں جائیں گے۔
جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ میں جویہ درخواست دی ہے کہ سرکاری ریکارڈ میں رد و بدل کیا جا رہا ہے، وہ نہایت تشویش ناک ہے اور سپریم کورٹ کو اس کا سختی سے نوٹس لینا چاہیے۔
سپریم کورٹ کو ان بیانات کا بھی سختی سے نوٹس لینا چاہئے جو جے آئی ٹی کی مخالفت میں میاں صاحب کے حواری جوڈیشل اکیڈمی کے باہر کھڑے ہو کر دیتے رہتے ہیں۔
جوڈیشل اکیڈمی کو ہمارے عدالتی نظام کی علامت زیادہ اور ایک سرکس کم نظر آنا چاہیے۔ اُمید ہے کہ وزیر اعظم کی موجودگی میں ایمبولینس نہیں منگوائی جائے گی۔ اور نہ ہی ان کی کوئی تصویر قوم کی دلچسپی کا مرکزبنوائی جائے گی۔

Scroll To Top