اٹلی میں کوسٹ گارڈز نے 484 غیر تارکینِ وطن کو ڈوبنے سے بچالیا

nبنگلہ دیش اور افریقی ممالک سے تارکین وطن نے اٹلی پہنچنے کےلیے لیبیا میں انسانی اسمگلروں کو بھاری رقوم ادا کی تھیں۔ (فوٹو: رائٹرز)

روم: اٹلی کے ساحلی محافظوں نے غیر قانونی طور پر یورپ میں داخل ہونے والے 484 تارکینِ وطن کو بچالیا ہے جبکہ 7 افراد کی لاشیں سمندر سے نکالی جاچکی ہیں۔

اٹلی کے کوسٹ گارڈز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ساحلی محافظوں نے اطالوی سمندری حدود میں اطالوی بحریہ، دو نجی بحری جہازوں اور ایک امدادی گروپ کے ساتھ مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے ربڑ کی چار کشتیوں پر سوار 484 تارکین وطن کو ڈوبنے سے بچالیا ہے جبکہ اس واقعے میں اب تک 7 افراد کے مرنے کی اطلاع بھی ہے۔

کوسٹ گارڈز کے مطابق بنگلہ دیش اور مختلف افریقی ممالک سے تعلق رکھنے والے مذکورہ تارکین وطن نے لیبیا میں انسانی اسمگلروں کو بھاری رقوم ادا کی تھیں تاکہ وہ انہیں سمندری راستے سے یورپ پہنچا سکیں۔

عالمی تنظیم برائے تارکینِ وطن کے مطابق اس سال پہلے چار مہینوں میں 45 ہزار سے زائد افراد شمالی افریقہ سے کشتیوں کے ذریعے اٹلی پہنچ چکے ہیں اور یہ تعداد 2016 کے ان ہی مہینوں میں افریقہ سے اٹلی کی جانب ہونے والی غیرقانونی نقلِ مکانی کے مقابلے میں 40 فیصد زیادہ ہے۔

یورپ پہنچنے کی کوششوں میں اس سال اب تک 1200 سے زیادہ افریقی باشندے ہلاک ہوچکے ہیں۔

Scroll To Top