میاں نواز شریف نے آخر سچ بول دیا

kuch-khabrian-new-copy


چین میں ایک کثیر الملکی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے میاں نواز شریف نے ایک ایسے سچ کا اعتراف کر لیا ہے جو ان کی حالیہ”سیاست“ کی مکمل طور پر نفی کرتا ہے۔ آصف علی زرداری اور میان نواز شریف دونوں یہ دعویٰ کرنے میں پیش پیش رہے ہیں کہ ”سی پیک “ کا منصوبہ ان کے زرخیز ذھنوں کی پیداوار ہے۔ اُن کے اِس دعوے کی بدولت اُن کے پیش رو جنرل پرویز مشرف کو بھی اس دوڑ میں شریک ہونا پڑا ہے کہ ”چین پاکستان اکنامک کاریڈار“ کے تصور کا موحد کون ہے۔
متذکرہ کانفرنس میں میاں نواز شریف کے سامنے اور کوئی چارہ نہیں تھا کہ چین کی اعلیٰ قیادت کو ”ون بیلٹ ون روڈ“ کے ”دیو قامت “ منصوبے کا وژن سامنے لانے اور اس پر عمل درآمد کرنے کے اقدامات پر خراجِ تحسین پیش کریں۔ میاں نواز شریف کی خوش قسمتی یہ ہے کہ وہ وزیر اعظم صحیح وقت پر بنے جب چینی قیادت اس منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لئے سرگرمِ عمل ہو رہی تھی۔ اگر میاں صاحب کی جگہ ممنون حسین بھی وزیر اعظم ہوتے تو بھی یہ منصوبہ اس طرح شروع ہونا تھا اور آگے بڑھنا تھا۔ اس منصوبے کی کامیاب تکمیل میں اہم کردار پاک فوج کا تھا جس نے جنرل راحیل شریف کی قیادت میں پورے راستے پر سکیورٹی فراہم کرنے کا بیڑہ اٹھایا۔ یہاں میں اِس حقیقت کو سامنے لانا ضروری سمجھتا ہوں کہ ون بیلٹ ون روڈ اور اس منصوبے سے منسلک دوسرے منصوبوں پر چینی قیادت نے ایک ہزار بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا عندیہ دے رکھا ہے۔ اس میں 46 ارب ڈالر کی رقم قرضوں کی صورت میں پاکستان کے اندر خرچ کی جائے گی۔ باقی 954ارب ڈالر یورپ ایشیا اور افریقہ کے ممالک کے اشتراک سے خرچ کئے جائیں گے۔
مجھے اِ س ضمن میں تقریباً سترہ اٹھارہ برس قبل پاکستان میں کام کرنے والا ایک چینی سفیر یاد آرہا ہے جسے اردو بولنے پر عبور حاصل تھا۔ اس سے میری خاصی شناسائی ہوگئی تھی۔ جب امریکہ نائن الیون کے بعد حالتِ جنون میں گرفتار تھا تو مجھ پر ایک طرح سے مایوسی کی کیفیت طاری تھی۔ میرے خیال میں یہ تب کی بات ہے جب بھارت نے لال قلعے کے واقعے کو بہانہ بنا کر اپنی فوجیں سرحدوں پر لا کھڑی کی تھیں۔
ہمارا کیا بنے گا؟ ایک ملاقات میں میں نے مایوس لہجے میں متذکرہ چینی سفیر سے کہا۔
”پاکستان ہمارا دوست ہے۔ ہم نے پاکستان پر اربوں کی سرمایہ کاری کی ہے۔ اور آئندہ اس سے بھی زیادہ سرمایہ کاری ہوگی۔ ہم پاکستان کی حفاظت پاکستان کو چین سمجھ کر کریں گے۔۔“

Scroll To Top